Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » قصہ

قصہ

May, 2022

  • 11 May

    خدا ترس ۔۔۔ عابد میر

    نحیف اور پیرسن مزدور کی طبیعت اُس روز کسی صورت کام کرنے جیسی نہ تھی۔ بوڑھی ہڈیاں بوریوں کا بوجھ اٹھانے سے نالاں تھیں۔ کم زور کندھے احتجاج میں مزید جھک گئے تھے۔ ساتھیوں نے بھی اسے یہی مشورہ دیا کہ جا کر بڑے صاحب سے بات کر لے۔ ہانپتا کانپتا وہ صاحب کے کمرے تک تو چلا آیا……اب سمجھ ...

  • 11 May

    مزدور ۔۔۔ سعادت حسن منٹو

    لْوٹ کھسوٹ کا بازار گرم تھا۔ اس گرمی میں اِضافہ ہو گیا جب چاروں طرف آگ بھڑکنے لگی۔ ایک آدمی ہارمونیم کی پیٹی اْٹھائے خوش خوش گاتا جا رہا تھا۔ “جب تم ہی گئے پردیس لگا کے ٹھیس، او پیتم پیارا، دْنیا میں کون ہمارا۔” ایک چھوٹی عمر کا لڑکا جھولی میں پاپڑوں کا انبار ڈالے بھاگا جا رہا تھا، ...

April, 2022

  • 23 April

    نیلم ۔۔۔ سعیدہ گزدر

    موسم خوشگوار تھا۔ کوٹ اتار کر سجاد نے کاندھے پر ڈال لیا  اور دور تک نظریں دوڑائیں۔ وہ ابھی تک نہیں آئی تھی۔ تین دن سے متواتر وہ اُسے اِس سڑک پر دیکھ رہا تھا۔ آج اُس نے پکا ارادہ کر لیا تھا کہ ضرور اُس سے بات کروں گا۔ مگر وہ ابھی تک دکھائی کیوں نہیں دی؟۔ چلتے چلتے ...

  • 23 April

    مکران کی بیٹی ۔۔۔ گوہر ملک /شاہ محمد مری

    کہتے ہیں کہ مکران کا ایک بلوچ ایک سال خان کے ٹیکس ادا نہ کرسکا۔ خان کے نائب نے ٹیکس کے بدلے میں بلوچ کی بیٹی گرفتار کر لی اور کلات بھیج دی۔ جو بھی ایک بار خان کے کلات میں داخل ہوا وہ پھر زندہ  وہاں سے نہ نکل پاتا۔ وقت ماہ و سالوں کے حساب سے گزرتا گیا۔ ...

  • 23 April

    اِے کسّہے نہ اِنت ۔۔۔ سدرہ نسیم

    مْدامی ئیں وڑا بَلّْک مروچی پداکسّہ آرگا اَت۔ چوناہا بلّْک ئے دیم ئے ھرچ کرچک ئے  تہا وڑ وڑیں کسّہ چیر اَت۔ آنہیا ھمے کسّہانی تہاچہ یک یک کسّہے کشّ اِت او مارا سَر کْت۔ آنہیا ھر وھد شپا کسّہ کتگ اَت پمشکا برے برے مناگمان بوتگ اَت شپ وت بلّْکی کسّہ اَنت۔ برے برے من روچ،  ماہ،  استال، کوہ ...

  • 23 April

    عیباں والیاں دے متھے لالڑیاں ۔۔۔ سبین علی

    شیش محل بھی شاہجہاں نے تعمیر کروایا تھا۔ یہاں جب رات کے وقت مشعلیں  روشن کی جاتیں تو  ان کی آگ کے ہزار ہا عکس ان آئینوں سے پھوٹتے ہیروں کی  مانند جگمگانے لگتے۔ شاہ جہاں جو ممتاز محل سے اپنی محبت کی نشانی کے طور پر دنیا بھر کو تاج محل کا  تحفہ بھی دے گیا. اس خوب صورت ...

  • 23 April

    فحاشی ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

    تین منزلہ شاپنگ مال کی وسیع و عریض دیوار پر ایک نہایت ہی دلفریب بکنی میں ملبوس حسینہ کی  ابھری ہوئی تصویرلگی  تھی جس کا اوپری دھڑ ایک مجسمہ کی شکل میں تھا- تصویر سے باہر نکلتا ہوا  دودھیا سینہ وہاں سے گزرنے  والوں کو ٹھٹک کر دوبارہ دیکھنے پر اکسا رہا تھا – طویل مسافت طے کر کے آئی ...

  • 23 April

    ایک دسترخوان تین قسم کے کھانے ۔۔۔ نور محمد ترہ کی/جعفر ترین، نعیم آزاد

    وہ بے چارہ صبح سویرے اٹھتا او راٹھ کر کھاد لے جانے کا کام شروع کرتا۔ وہ یہ کھاد اپنے کندھے پر لاد کر اپنی زمین پر لے جاتا۔ آٹھ افراد پر مشتمل اس خاندان کا گزر بسر بہت مشکل سے ہورہا تھا کیونکہ زمین بہت کم بلکہ نہ ہونے کے برابر تھی۔ اس سے فقط تین مہینوں تک گھر ...

  • 23 April

    بکری اور بھیڑیا ۔۔۔ گوہر ملک/شاہ محمد مری

    زگرینؔ کے ریوڑمیں ایک بکری تھی۔ ایک روز بکری نے اپنے دل میں کہا ”ہر سال جب زمستان آتا ہے تو واجہ زگرینؔ ہمیں ہانک کر کچھی اور سندھ کی طرف لے جاتا ہے۔ اس سال میں نہیں جاؤں گی۔۔۔ یہیں ہر بوؔٹی کی خوشبو بھری وادیوں میں رہوں گی۔ درہنہ، پودینہ اور سمسور نامی جڑی بوٹیاں چَر لوں گی۔ ...

  • 23 April

    لاچاری ۔۔۔ موپساں /دانش داغ

    اے  دولاچاری ئے کسّہ انت۔  یکّے آ وتی عادت پیلو کنگی ات و دومی آ  وتی شْدئے  آس توسگی ات۔ چپ و چوٹیں کوہانی ندارگے تاں دْوراں روان ات۔ ریل ئے  دگ دریاو سیاہ وسنگوئیں کوہانی میانا  سہریں ریکانی سرا چیر گیتکگ ات۔ ریل انّی کمو دیراں پیسر جنوآ  چہ در اتکگ ات۔ نوں پٹڑی(دگ) سرا چو آہن ئے  مارا  ...