Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » مزدوروں کا گیت ۔۔۔  اسرار الحق مجاز

مزدوروں کا گیت ۔۔۔  اسرار الحق مجاز

محنت سے یہ مانا چُور ہیں ہم

آرام سے کوسوں دُور ہیں ہم

پر لڑنے پر مجبور ہیں ہم

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

گو آفت و غم کے مارے ہیں

ہم خاک نہیں ہیں تارے ہیں

اس جگ کے راج دلارے ہیں

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

بننے کی تمنا رکھتے ہیں

مٹنے کا کلیجہ رکھتے ہیں

سرکش ہیں سر اونچا رکھتے ہیں

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

ہر چند کہ ہیں ادبار میں ہم

کہتے ہیں کھلے بازار میں ہم

ہیں سب سے بڑے سنسار میں ہم

مزدور میں ہم مزدور ہیں ہم

 

جس سمت بڑھا دیتے ہیں قدم

جھک جاتے ہیں شاہوں کے پرچم

ساونت ہیں ہم بلونت ہیں ہم

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

گو جان پہ لاکھوں بار بنی

کر گزرے مگر جو جی میں ٹھنی

ہم دل کے کھرے باتوں کے دھنی

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

ہم کیا ہیں کبھی دِکھلا دیں گے

ہم نظمِ کہن کو ڈھا دیں گے

ہم ارض و سما کو ہلا دیں گے

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

ہم جسم میں طاقت رکھتے ہیں

سینوں میں حرارت رکھتے ہیں

ہم عزمِ بغاوت رکھتے ہیں

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

جس روز بغاوت کر دیں گے

دنیا میں قیامت کر دیں گے

خوابوں کو حقیقت کر دیں گے

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم

 

ہم قبضہ کریں گے دفتر پر

ہم وار کریں گے قیصر پر

ہم ٹوٹ پڑیں گے لشکر پر

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں

Spread the love

Check Also

موازنہ  ۔۔۔ فضل احمد خسرو

کیسا فن ہے؟ کیا فن کاری؟ ایک نمائش خود کو نمایاں تر کرنے کی چھوٹی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *