Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی (page 8)

شیرانی رلی

November, 2021

  • 6 November

    صفر۔۔۔ تمثیل حفصہ

    زندگی کے پنے پر خواب بھی نہ لکھوں کیا؟ روشنی کے منظر کو آنکھ موند کر دیکھوں، سوچ بھی خریدوں تو مفلسی کے دامن سے گرہیں جوڑ کر رکھ دوں، چیخ بھی دبا لوں کیا؟ چپ سے بیٹھ کر تنہا راز بھی چھپا لوں کیا؟ کس طرح سے آئینہ دیکھتا ہے تو مجھ کو عیب بھی دکھا دوں کیا؟ دیکھ ...

  • 6 November

    کچی بستی ۔۔۔  توقیر گیلانی

    یہاں سے نکلو یہاں سے نکلیں۔۔۔کہاں پہ جائیں؟ کہیں بھی جاؤ، یہاں سے نکلو مگر ہمارے تو گھر یہی ہیں۔۔!۔ تہمارے گھر تھے، پر اب نہیں ہیں ہمارے دستِ ہوس کی دستک تمہاری بستی پہ ہوچکی ہے کواڑ کھولو، اٹھاؤ گٹھڑی، یہاں سے نکلو مگر۔۔۔ اگر مگر کچھ نہیں چلے گا ہٹاؤ اپنے یہ لال پرچم انہیں بھی گٹھڑی میں ...

  • 6 November

    غزل ۔۔۔  عشرت آفرین

    مرگِ  شہرِ   دانش  کا   مرثیہ   لکھا    جائے اور کیا  ہے  لکھنے  کو  اور  کیا  لکھا   جائے   کچھ بھڑاس  تو  نکلے  دل  کی  چاہے  جو بھی ہو وہ  برا  لکھا  جائے   یا    بھلا   لکھا    جائے   جشنِ  مرگِ  اسرافیل ہم  منائیں  گے، پہلے بے   حسی   کے  عالم  کا   ماجرا   لکھا  جائے   اپنے سارے عیبوں کو ڈھانپ کر ہی رکھا ...

  • 6 November

    ماثِ ئے شان ۔۔۔  قمر الدین بزدار

    نلبھوں لفظ آں رازیں مں تئی شان چے لکھاں اے جہانا بذل تھا میں تھوئے ذیشان چھے لکھاں گوزیاراں پالثے مئیں جند ویل تھو دیثغاں کائی بے ذوقیں سوا اشتو وثی گزران چھے لکھاں تھئی یاداں کھنا ننداں نگزنت شف زمستانی سوزے مئیں دلا داثئے کھناں ارمان چھے لکھاں نویثہ حق ادا ئی تھئی دل شے وزتاں پُھریں نئے ثوں ...

  • 6 November

    غزل ۔۔۔  عشرت آفرین

    ہے کیسے کیسے خزانے چھپائے تودہئِ ِخاک ملا کسی کو نہ کچھ ماسوائے تودہئِ خاک   تمہارے ساتھ تو ہوتی تھی بات پھولوں کی تمہارے ذکر پہ کیوں یاد آئے تودہئِ خاک   وہ مسکراتے ہوئے لب وہ مہرباں آغوش لپٹنا چاہوں تو اب ہاتھ آئے تودہئِ خاک   یہ ساعتِ گزراں کررہی ہے سرگوشی حیات کچھ بھی نہیں ماسوائے ...

  • 6 November

    میرساگر

    نہ ینت ابرْو چھڑی اَنت میر توبہ آعین اَنت،ہتھکڑی اَنت میر توبہ   گلاب اَنت آ کہ لنٹ اَنت کے بہ ڈسّیت آ گپ انت پْلجھڑی انت میر توبہ   ھَوَے دل گوں وتی قولاں جَنَات ئے نہ سبزیں اَگّڑی اَنت میر توبہ   کن اَنت ھِرّ او  جَنَنت کستانی پشتا اے رندانی اَڑی اَنت میر توبہ   پدا اَتک ...

  • 6 November

    اسیرِ فسانہ ۔۔۔  کوثر جمال

    قرنوں کا سفر تھا اور زیست کرنے کی لگن بھی سو رفتہ رفتہ محنت کی شکتی نے ایک چوپائے کے ہاتھوں کو کارِ مسافرت کے آ  ہنی پنجے سے چھڑا لیا   چوپایہ کہ اب وہ چوپایہ نہیں تھا اس کے عمودی جسم اور اٹھی نگاہوں کے اسیر ہوئے زمین و آسماں کے لامحدود سلسلے اس کے آزاد ہاتھ آکاش ...

  • 6 November

    شیشغ۔۔

    شاعر سید خان بزدار نزاروغ۔۔ ڈاکٹر غلام نبی ساجد بزدار   ہو دا وخت شئے سنداں ٹپثہ بدہی آں درا نئے حدیث اں نیں،شاہذی چینینی گواہ سیزدمی تھامیں چھاڑدمی پھار  یغو  فنا ہ مختا کوڑی آ پھانزدمی سدی ئے ہوا آخرے گواثا بیڑ ثو اندھاری ُمژا ُ ُہجُ والا آں لڈثو  دیری  شے  تڑا پت پالوغاں گو وثی پھجی آ ...

October, 2021

  • 14 October

    اللہ بخش بزدار ۔۔۔ دریدہ  ئے ناما

    من جیذاں،سوزغاں لکاں گلاباں،پرپغاں رنگاں دریناں زیمراں  لکاں مں انجیراں پتن تاخیں یا زین ئے پلپلاں لکاں پخیراں،رولیاں لکاں مں بالاچے،نقیبوے یا چُکی لولی اے لکاں مں زہریں موتکے لکاں یا نوخیں ہالوے لکاں امیدانی دلے لکاں ودارئے دیر پاندیں پادروش ئے قصواں لکاں گوشئے ہمروش کسے کئے مئیں ہر حرفئے زواں بریث و چماں کور کاں کلی

  • 14 October

    میر ساگر

    ساہ سَک با نکھرے نیست شَک بانکھرے   تئی نظر  نیک بات کمّے جَک!  بانکھرے   ما نہ وانوں جْزاں مئے سبق  بانکھرے   پَمّا  تئی  مْسکگے یار!  لَکھ بانکھرے   ما دی حقدار تئی او  مئے حق بانکھرے   کْل شمشت اَنت منا لال! یک بانکھرے   میر   بْرتہ   غماں سبز رک  بانکھرے