Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی (page 5)

شیرانی رلی

February, 2022

  • 10 February

    غزل ۔۔۔  حبیب الرحمن

    کہنی بات نگار شات میں کبھی اشعار کی صورت خیال ڈھونڈ ہی لیتا ہے اظہار کی صورت   رہتے ہیں کچھ لوگ بگاڑ کے درپے نکل آئے کاش سُدھار کی صورت   نفی اثبات میں پایا رازِ زندگی پہناں انکار کے رنگ میں کبھی اقرار کی صورت   رکھتے ہیں روشن اُمید کی شمعیں سماج کی لاج،قلمکار کی صورت   ...

  • 10 February

    یہ زندگی کے میلے دنیا میں کم نہ ہوں گے ۔۔۔  شکیل بدایونی

      فلمی گیت   یہ زندگی کے میلے یہ زندگی کے میلے دنیا میں کم نہ ہوں گے افسوس ہم نہ ہوں گے یہ زندگی کے میلے دنیا میں کم نہ ہوں گے دنیا ہے موجِ دریا قطرے کی زندگی کیا پانی میں مل کے پانی، انجام یہ کہ فانی دم بھر کو سانس لے لے یہ زندگی کے میلے ...

  • 10 February

    شہرسورج کا ہوں۔۔۔افضل مراد

    شہرسورج کا ہوں بحرو برکی سبھی وسعتیں مجھ سے منسوب ہیں گوات کا در ہوں میں دور نزدیک ہراک کوازبرہوں میں مجھ کو اپنوں سے دوری کی دے کر سزا کبھی بیچاگیا پھرخریداگیا پر مری چاہتوں میں کوئی فرق آیا نہیں گیت گاتا رہاگنگناتا رہا ساحلوں،کشتیوں پانیوں پر صبح شام جیون بتاتا رہا     شہرسوج کا ہوں پریہاں نیلگوں ...

  • 10 February

    تہنیت ۔۔۔  نسیم سید

    نوازشیں ہیں وقت کی کہ آ ج پھر ہمارے ہاتھ پر دھری ہیں مہلتیں اب کے سال پھرانہیں گنوا ئیں گے؟ کہ وہ جو وحشتوں کی بھیڑبھاڑمیں کھو دیا کہیں وہ اپنا چہرہ ڈھوند لا ئیں گے تازہ مہلتوں کی تہنیت عزیزو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جانے کیوں!۔ دل میں اک ہمک سی ہے یقیں سا ہے کہ جیسے اب کے سال کی کتا ...

  • 10 February

    مجال ۔۔۔  سیمیں درانی

    اے زندگی بنی تیری بندگی یہ جو گھڑی گھڑی کا حساب ہے نہ سود ہے نہ زیاں یہاں یہ تو مثل راندہ خوار ہے کہاں کے سجود، کن کے وجود جو پلٹ دے توْ، تو سب ہی مات ہے وہ ہے بے نیاز، تو ہے بے ثبات میرا وجود بھی خود،میں سراب ہے جو بِتا دیا یا بتا دیا فرق ...

  • 10 February

    غزل ۔۔۔  رخشندہ نوید

    نہ جانے پانی کی رہتی ہے کیوں کمی مجھ میں ان آنسوؤں کی کبھی جذب ہو نمی مجھ میں   اب ایک جیسا ہی لگتا ہے دونوں کا احساس کچھ ایسے یکجا ہوئی ہے غمی خوشی مجھ میں   اِسے مٹانے میں نفرت نہ میرے کام آئی یہ کیسی پختہ محبت سی ہے جمی مجھ میں   ہر ایک درد ...

  • 10 February

    ما ئے نی ۔۔۔  ثروت زہرا

    ہانڈی میں رات آنسوؤں کا نمک  اتنا تیز ہوگیا تھا کہ وقت کی گیلی زبان پر کسیلا رنگ ٹھہر گیا ہے دل کی آنگیٹھی پر رات آگ جلا کر بجھا ئی گئی مگرایک کوئلہ مٹی میں مستقل جاگتا رہ گیا اور بیچاری  بادِ نسیم اْسے  بجھانے میں ہاتھ  جھلسا گئی گندمی شاخوں کی خوشبو نتھنوں کے سراب میں دور تلک ...

  • 10 February

    دولت کے بغیر ۔۔۔   عبدالرحمن غورؔ

    ہر طرح میں نے تمہیں چاہا تھا!۔ تم سے بے لوث محبت تھی مجھے تم سے خاموش عقیدت تھی مجھے آج محسوس یہی ہوتا ہے اِک حسیں خواب کبھی دیکھا تھا   تیری محفل، ترے کاشانے میں میں مئے ناب کہاں سے لاتا دیب و کمخواب کہاں سے لاتا میں تصور بھی نہیں کرسکتا دُرِ نایاب کہاں سے لاتا   ...

  • 10 February

    Temporary Fever — Aqsa Gharshin

    It could have been a silent walk In midnight hours With coffee brewed Our favourite book It could have been the gentle rain Kissing the earth Our feet could match it’s cadence still a conversation beneath the tree It could have been the mountains steep majestic much the smell of pines The warmth of you your soothing voice A starry ...

  • 10 February

    وثی پثہ سوب بیغہ حال رستئی ۔۔۔  گوہر ملک

    نشتگو رب ئے قدرتاں چاریں دریں گپتاران ات دم دما ماریں اتکہ ٹیل فونے اچ کراچی آ قادرا برتہ جوان ترین چی آ مالک ئے کاراں بوتگوں راضی سد سپت رب العزتا براضی در حدیث شاعر اے جہان اشتہ ڈاہے ماں کوہ و کوچگاں پرشتہ