مضامین

بلوچ کانفرنس اقتدار میں

  1932میں یوسف کے والد کیسر خان کو سیاسی وجوہات کی بنا پر سرداری سے معزول کر کے ملتان بدر کیا گیا اور اُس کی جگہ اس کا بڑا بیٹا گل محمد سردار بناتھا۔ شاعر گل محمد بیما راور نا اہلی کی حد تک لاپرواہ ثابت ہوا۔ اُس سے سرداری ...

مزید پڑھیں »

مٹی سے

  اے ری مٹی تو کیوں جلتی آگ اگلتی، روتی روکر چشمہ ہوتی اڑتی آگے بڑھتی، مڑتی رہتی ہے!۔ ایسا مت کر میری مٹی!۔ اے ری مٹی!۔ آگ تجھے کندن کردے گی لہر تجھے روشن کردے گی تجھ پر بیٹھی دھول اڑا کر تیز ہوا تجھ کو وہ پہلی اصلی ...

مزید پڑھیں »

سٹرائک

  نیپلز میں ٹرام کے ملازمین نے سٹرائک کر رکھی تھی۔ ”ریویرادیؔ کیا یا“کے ایک سرے سے دوسرے سرے تک خالی ٹراموں کی ایک قطار لگی ہوئی تھی اور کنڈکٹروں اور ڈرائیوروں کی۔۔ ان زندہ دل، باتونی اور پارے کی طرح بے تاب اور پھر تیلے نیپلزیوں کی ایک بڑی ...

مزید پڑھیں »

فہمیدہ ریاض

  ہائے کہ وہ شجر جس نے قلم و سیاہی کو جلا بخشی وہ شجر جس پر ہم جیسوں نے کُچھ فیض حاصل کیا وہ شجر جس نے خون شہر میں کتاب کے ورقوں کی خوشبو بکھیری وہ شجر جس کے باعث روشن سندھی ، بلوچی ، پشتوں و پنجابی ...

مزید پڑھیں »

ناول ارادھنی

ارادھنی زیبدہ بروانی کا پہلا ناول ہے۔ 383صفحات پر مشتمل یہ ناولMy Publicationنے شائع کیا ہے۔ قیمت650روپے ہیں۔ کتاب کا انتساب حضرت شمس تبریز کے نام ہے۔ زبیدہ میری بہت عزیز دوست ہے، ہماری دوستی کی بنیاد تصوف کا وہ سنجیدہ رخ ہے جس میں علم و دانش کی راہیں ...

مزید پڑھیں »

ایک چھوٹی سی کتاب

  نام تو اس پر دونوں کا ہے لیکن اینگلز کا کہنا تھا کہ لکھا اسے دراصل صرف مارکس نے تھا۔ اقبال نے کہا تھا ’’وہ پیغمبر نہیں ، لیکن ایک کتاب اس نے بھی دُنیا کو دی ہے۔‘‘ کتاب کہاں، کتابیں کہئے، اقبال کا اشارہ شاید ’’سرمایہ‘‘ کی طرف ...

مزید پڑھیں »

محبت فروش

  اے ذ ینیی۔۔۔ اے ذ ینیی۔۔۔۔ زنیرہ زنیرہ۔۔۔۔۔۔۔۔ امی کی ساری تلملاہٹ میرا نام پکارنے میں ہی سمٹ آتی ہے۔ جی امی۔۔۔۔۔۔ آتی ہوں۔۔۔۔رَرا ٹی وی۔ کی آواز مدہم کر دے۔ تیرے ابا اونگھنے لگ گئے ہیں۔ کچن کا بلب جلتا ہی رہنے دو۔ اماں کچن کے کیڑے مکوڑے ...

مزید پڑھیں »

سنگت ستمبر،ریویو

  ہمیشہ کی طرح سنگت کا ٹائٹل پیج دل کو چھو لینے والا ہے۔تصویر میں پرنسز آف ہوپ کے بورڈ کے ساتھ ایک بچی کھڑی ہے جس یہ اخذ کیا جاسکتا ہے کہ ایک پتھر پرنسز نہیں ہوسکتا، اصل پرنسز آف ہوپ تویہ بچی ہے یعنی عورت ہی امید کی ...

مزید پڑھیں »

پھولوں والی فہمیدہ کے نام

مری صاحب،آداب یہ ایک نظم جو فہمیدہ باجی کے انتقال پر لکھی تھی۔ اس کے پیچھے کہانی یہ ہے کہ دو ہزار سترہ میں بس نے اپنی فیس۔ بک پوسٹ میں لکھا کہ میں بہت بیمار ہوں بہت دْکھی ہوں۔دوستوں کو چاہئے کہ فورا پھول بھیجیں وغیرہ وغیرہ۔ میں حسب ...

مزید پڑھیں »

ڈاکٹر خدائیداد صاحبیؔ

  ڈاکٹر خدائیداد اپریل1920 کو عنایت اللہ کاریز گلستان میں پیدا ہوا۔ ڈاکٹر خدائیداد کا تعلق ڈیرہ اسماعیل کے پشتون قبیلے گنڈہ پور سے تھا ۔ ڈاکٹر صاحب کے دادا مذہبی اور درویشی کی تعلیم کے حصول کے لیے کبھی غزنی، کبھی کہاں کبھی کہاں وہ آخرکار قندھار جاکر اپنی ...

مزید پڑھیں »