مضامین

شمی

اسے بارش بہت اچھی لگتی تھی بارش کے قطرے جیسے اسکے جلتے زخموں پر مرہم بن جاتے تھے۔ شمی آنکھیں بند کر کے سستا رہی تھی ۔سر پر رات کے لگے گھائو کی تکلیف کم ہو رہی تھی..وہ بارش کے قطروں میں سکون تلاش کر رہی تھی .. بارش کی ...

مزید پڑھیں »

مبارک قاضی

4دسمبر1955تا 18ستمبر2023 سوشل میڈیا کے افواہ ساز بازار میں مبارک علی قاضی کے مرنے کی جھوٹی خبر یں کئی بار دی گئیں۔ مگر چند منٹوں میں کوئی شخص اس کی تردید کر کے فرضی سونامی کو رفع کرتا رہا۔ مگر اب کے (ستمبر2023میں)ایسا نہ ہوا۔ ایک وٹس ایپ گروپ نے ...

مزید پڑھیں »

کتاب۔ کاکاجی صنوبر حسین۔ کا ریویو

کتاب کا نام :کاکاجی صنوبر حسین مصنف: ڈاکٹر شاہ محمد مری قیمت: 500 روپے مبصر: عابدہ رحمان آنکھوں میں کچی نیند کی سرخی لیے نیند کو چٹکیاں کاٹتے پرے کیا اور منہ پرپانی کا چھپا کا مارنے کو دوڑ لگا دی۔ جلدی جلدی تیار ہو کر باہر کا رخ کیا ...

مزید پڑھیں »

وقت کا نوحہ

میرے روئی کے بستروں کے سلگنے سے صحن میں دھواں پھیلتا جا رہا ہے گھروں کی چلمنوں سے اس پار باہر بیٹھی ہَوا رو رہی ہے نظام سقّہ پیاس کی اوک کے سامنے سبیل لگائے ہوئے العطش بانٹتا ہے زمانہ پیاس کے نوحے پر ماتمی دف بجا رہا ہے ڈبلیو ...

مزید پڑھیں »

مبارک قاضی پر فکریں شاعر

مبارک قاضی شخصیت او علم و ادب وثی وطنہ خاطرا آنہی جہدو خذمت کھسا شہ لکھزی آ نہ انت۔بلوچی زوان و ادبا پہ واسطہ آنہی خذمت بے مٹ و بے مثال انت۔آنہی شاعری ءِ بن بنیاد وثی ماثیں ڈغار او وثی بزغیں مہلوق , مہلوق ءِ دڑد ویلیں قصہ است ...

مزید پڑھیں »

گوں مبارکءَ

منی اولی او گڈی گند و نند گوں ابا مبارکا ماں کراچی آ َ بوت سال و ماہ دسمبر 2021 اَت من چِد و ساری بھے نہ زانتگ یا انچو مردمانی گپ اش کتگ انت من گشتگ بلکیں ابا کازی وتسراوت زاہ دنت یا ھبردنت بے اِزّت کنت۔ من ، ...

مزید پڑھیں »

غزل

رشتے ناتے کھیل تماشا سب کچھ میں نے چھوڑ دیا سب کچھ میں آپ کو بخشا سب کچھ میں نے چھوڑ دیا ایک تمہارا درد مجھے بس ساحل تک پہنچانا تھا کشتی چپو ساگر دریا سب کچھ میں نے چھوڑ دیا اس دنیا میں رہ کر بھی میں کس دنیا ...

مزید پڑھیں »

فہمیدہ ریاض کی وصیت

یارو! بس اتناکرم کرنا پسِ مرگ نہ مجھ پہ ستم کرنا مجھے کوئی سندنہ عطا کرنا دینداری کی مت کہنا جو شِ خطابت میں دراصل یہ عورت مومن تھی مت اُٹھنا ثابت کرنے کو ملک وملت سے وفاداری مت کوشش کرنااپنالیں حکام کم ازکم نعش مری یاراں ، یاراں کم ...

مزید پڑھیں »

*

میں راجداری کتاب کے ہر ورق پہ اپنے لہو سے لکّھونگا بعد میرے مرے یہ نغمے ہر ایک دیوار و دَر پہ لکّھیں ہر ایک پتّھر پہ یہ نوشتے ضرور سینچیں کہ آگہی ہو وطن پرستوں کو ‘ ہے وطن کیا ؟ وطن جو صدیوں سے اپنی آزادی کا نشاں ...

مزید پڑھیں »

کمبر، قاضی اور انگلش بوتل

درد کا سفر ہمیشہ طویل اور تھکا دیتا ہے، بات صدیوں کی ہو تو وہ سفر عشروں میں ختم نہیں ہوتی ہے۔ ایک ایسے سفرمیں جب مسافت طویل اور زادِ راہ خونِ جگر کے سوا وقت کے تھپیڑے اور زمانے کے گھاﺅ ہوں تو راہی پھر بھی تھک نہ جائے ...

مزید پڑھیں »