مضامین

ہفت روزہ عوامی جمہوریت کی تاریخ

  28اکتوبر1972کا شمارہ ایک اہم موضوع سے شروع ہوتا ہے : پاکستان کی نظری اساس۔یہ موضوع اس لیے اہم تھا کہ بہت فنکاری اور قوت کے استعمال سے ہماری ساری تاریخ تبدیل کی گئی تھی۔ ہماری تاریخ ایک اچھی بھلی سامراج (انگریز) دشمن جدوجہد کی تاریخ رہی ۔ہم سب جانتے ...

مزید پڑھیں »

ماہنامہ سنگت کا ایڈیٹوریل

امریکی الیکشنز ۔۔ سکون کا سانس کرہِ ارض پہ موجود مخلوقِ خدا امریکی سامراج کی ماری ستائی ہوئی ہے ۔امریکہ آقاﺅں کا آقا بنا بیٹھا ہے ،سلطانوں کا سلطان ہے ۔دنیا کا کونسا ملک ہے جو امریکہ سامراج کی شیطانیت کا شکار نہ ہوا۔ایران میں مصدق پھانسی ، افغانستان میں ...

مزید پڑھیں »

تین تضادات

  اس وقت دنیا میں تین بڑے تضادات موجود ہیں۔ ایسے تضادات جو کہ بنیادی بھی ہیں اور جنگ کے بغیر اُن کا حل بھی کوئی نہیں۔ پہلا تضاد:طاقتور کپٹلسٹ ملکوں کے اپنے مابین ایک طاقتور تضاد موجود ہے۔ وہ تضاد دنیا کی لوٹ مار میں حصے کی کمی یا ...

مزید پڑھیں »

ہائے عبدالشکور

  وہ دسمبر 2020ء کا مہینہ تھا اور دسویں تاریخ تھی جب برادرم حمید علی کا فون آیا اور ایک ہولناک اطلاع دی کہ بھائی عبدالشکور کی اہلیہ کا انتقال ہوگیا۔گزشتہ کئی دہائیوں سے ہم بہت سے ہم نفساں تین دہائیوں سےزائدعرصے سےشکور صاحب کے ساتھی سنگی اور بیلی رہے۔بھائی ...

مزید پڑھیں »

کتاب کا مالی، منصور بخاری

  ضیاء الحق کا مارشل لا تھا۔ سخت پابندیاں تھیں۔ جلسہ جلوس، تقریر تحریر، اورتنظیم سیاست سب ضیا کے بوٹوں تلے۔ سارے سیاسی کارکن جیلوں میں۔ کوڑے سرِ عام مارے جارہے تھے۔اخبارات پہ بدترین سنسر شپ جاری تھا۔ ہر روز اخبار پہلے حاکم کو دکھایا جاتا، منظوری ہوتی تو ہی ...

مزید پڑھیں »

چیخوف کا سوانحی خاکہ

29 جنوری 1860 غربت زدہ گھرانے میں چیخوف کی پیدائش ۔۔۔ دادا کھیت مزدور ، باپ اشیائے خوردونوش فروش ۔ ماں مہربان ، باپ سخت گیر ۔ چیخوف کی 1879میں ماسکو منتقلی ۔۔ 1884 میں میڈیکل ڈاکٹر کی ڈگری ۔۔۔۔ اور پھر قلمی شغل ، افسانہ ، ڈرامے ، صحافت ...

مزید پڑھیں »

بندوق اور بانسری برداروں کا سبطِ حسن

  کوئٹہ سے 100 کلومیٹر دور مسلم باغ میں ایک نائی ہے۔ اسے سبطِ حسن 16 فروری 1986ء کو خط میں لکھ رہا تھا کہ:’جہاں تک مذہبی عقائد کا سوال ہے تو آپ ان بحثوں میں نہ پڑا کریں۔ ملک کا اصل مسئلہ اقتصادی اور سیاسی ہے اور جو طبقے ...

مزید پڑھیں »

کامریڈ ملک محمدعلی بھارا (مرحوم)

  ملتان اور گردونواح میں جس نسل کے اذہان پر 1960ء اور 1970ء کی دہائیوں میں عصری شعور نے دستک دی ان میں سے شاید ہی کوئی ہو جو کامریڈ ملک محمدعلی بھارا کے نام اور جدوجہد سے واقف نہ ہو۔ ایک سچے اُجلے زمین زادے اور ترقی پسند شعور ...

مزید پڑھیں »

ماشکیل کا تعلیمی نظام فیوڈل گرفت میں

ماشکیل کا تعلیمی نظام جاگیرداروں کی مضبوط گرفت میں۔ الطاف بلوچ محکوم قوم کا تعلیم و شعور حکمران طبقے امراء اور شرفاء کی سیاست کا کبھی موضوع نہیں ہوتا کیونکہ یہ طبقے قوم کے اسی تہذیبی شعور سے خائف رہتے ہیں۔ پالو فرائرے اپنی کتاب "تعلیم اور مظلوم عوام” میں ...

مزید پڑھیں »

میری کوئی مرضی نہیں

میری کیا مرضی ہوگی میری تو گواہی بھی آدھی مانی جاتی ہے، چاہے میں جرم اپنے سامنے اپنے سامنے ہوتا دیکھ بھی لوں تو مجھے اپنی آدھی لولی لنگڑی گواہی کے ساتھ دیوار سے لگا دیا جاتا ہے اور اس کی گواہی پوری مان لی جاتی ہے جو شریکِ جرم ...

مزید پڑھیں »