مضامین

ایڈیٹوریل

پاپولزم، بیرونی قرضے اور عوام      عمران خان ، فی الحال پنجاب کی حقیقت ہے۔اس لیے کہ اُسے ڈھونڈا گیا، خوب گھڑا گیا ،اور خوب تراشا گیا ۔ اُس کے ہارڈ ڈسک میں پنجاب یونیورسٹی کا مائنڈ سیٹ خوب اچھی طرح فیڈ کیا گیا ۔اُس کے بعد عوامی مسائل کے ...

مزید پڑھیں »

ساتواں نمبر

لکڑیاں آگ میں دہک رہی تھیں ۔شعلے اوپر تک اٹھ رہے تھے۔گلدستہ کے گال، آگ کی تپش سے انگارہ ہو رہے تھے۔ جانے وہ وہ کب سے رو رہی تھی۔ اور اماں صغراں اسے گاہے بگاہے ٹھیک ہونے کی تسلی دے رہی تھی۔ کچھ تو وہ پورے دن سے تھی ...

مزید پڑھیں »

ادل بدل

”چوہدری جی! لٹیا گیا، کسے نوں منہ دکھانڑ جوگا نہیں رہیا…“۔واویلا سن کر گہری نیند سویا ہوا زمیندار ہڑبڑا کر اٹھ بیٹھا۔ تیزی سے حویلی کے اندرونی حصے سے باہرکی طرف لپکا۔ نکلتے قد،گھنگریالے بالوں والا خوشرو چوہدری دلاور جسے ہر کوئی نکا چوہدری کہ کر پکارتا تھا، ابھی اپنی ...

مزید پڑھیں »

دو آتشہ

(تضمین ِ حافظ) از سرابی رَمیدہ ام کہ مپرس محشری برگزیدہ ام کہ مپرس من بطوری طپیدہ ام کہ مپرس داغ حِرمانی دیدہ ام کہ مپرس ”دردِ عشقی کشیدام کہ مپرس زہرِ ہجری چشیدام کہ مپرس“ دووست اِنت ماہ دیمیں قُدرتے شہکار وَش تَب و وَش خیالے وش گُپتار پُلّ ...

مزید پڑھیں »

ساری باتیں ایک سی ہیں

اک دن "آخر” آ جاتا ہے آنکھیں ان دیکھی کو دیکھنے لگتی ہیں پھولتا اور پچکتا سینہ سانس کا پتھر کُوٹ کُوٹ کے تھک جاتا ہے نقش پگھل جاتے ہیں چہرے دُھل جاتے ہیں نیند کی دیوی برف کے رتھ پر آتی ہے اور سَن سے جیسے شاخ سے پتا ...

مزید پڑھیں »

ماہانہ

ماجد کے ملک کے حالات ابتر تھے، ملک میں انسانیت کی تذلیل ایک گہری کھائی میں بدلتی جا رہی تھی، کروڑوں لوگ غربت کی اس دلدل میں اتر چکے تھے جو سرمایہ دارانہ نظام نے انتہائی باریک بینی سے ملک کے طول و عرض میں پھیلا دی تھی۔ تندور میں ...

مزید پڑھیں »

سیپ

گئے ہوئے کسی منظر سے گھور جیسا پل ٹپک کے آنکھوں سے جب بھی گرا ہے ہاتھوں میں گلے کی مالا بنا کر میں پہن لیتی ہوں مری یہ خاک چمکدار ہونے لگتی ہے کبھی جو روح میں تاریکیاں اتر آئیں تو جگمگا کے اجالا کروں گی تیرے لیئے۔۔۔ نجانے ...

مزید پڑھیں »

میاں محمود

27 نومبر1927……..3 جولائی1999 پاکستان کے اندر کمیونسٹ سیاست کی مست جوانی دیکھنی ہوتی تو میں آپ کو فیصل آباد جانے کا کہتا۔ وہاں کچہری بازار میں ” گلی وکیلاں“ نام کی ایک تنگ گلی ہے۔ ایک سادہ مگر کشادہ دو منزلہ مکان میں ادھیڑ عمر کا ایک شخص، چھڑا چھانگ ...

مزید پڑھیں »

میاں محمود

27 نومبر1927……..3 جولائی1999 پاکستان کے اندر کمیونسٹ سیاست کی مست جوانی دیکھنی ہوتی تو میں آپ کو فیصل آباد جانے کا کہتا۔ وہاں کچہری بازار میں ” گلی وکیلاں“ نام کی ایک تنگ گلی ہے۔ ایک سادہ مگر کشادہ دو منزلہ مکان میں ادھیڑ عمر کا ایک شخص، چھڑا چھانگ ...

مزید پڑھیں »

مجید امجد کے محبت کے چند وہ گیت جو وہ لکھ سکے اور نہ لکھ سکے

ساہیوال میں ایک ادبی کانفرنس میں شرکت کے لیے گئی تو پرانے دوستوں سے ملاقات ہوئی ۔ مجید امجد کی وفات کو کئی سال گزر گئے لیکن ساہیوال کے دانشوروں کے لیے ان کی ذات اور اُن کی شاعری ایک مسلسل موجودگی ہے ۔ مجید امجد کی موجودگی کے احساس ...

مزید پڑھیں »