مصنف کی تحاریر : شبیر رخشانی

کتاب ”گندم کی روٹی“

افغانستان نژاد بلوچی ادیب عبدالستار پردلی کا لکھا گیا ناول ” سوب“ کا اردو ترجمہ واجہ ڈاکٹر شاہ محمد مری صاحب نے ” گندم کی روٹی“ کے نام سے کیا ہے۔ یہ ناول کسان محنت کشوں کی جدوجہد کو سامنے رکھ کر لکھا گیا ہے جنہوں نے افغانستان میں جہد ...

مزید پڑھیں »

کتاب ”گندم کی روٹی“ پر تبصرہ

افغانستان نژاد بلوچی ادیب عبدالستار پردلی کا لکھا گیا ناول ” سوب“ کا اردو ترجمہ واجہ ڈاکٹر شاہ محمد مری صاحب نے ” گندم کی روٹی“ کے نام سے کیا ہے۔ یہ ناول کسان محنت کشوں کی جدوجہد کو سامنے رکھ کر لکھا گیا ہے جنہوں نے افغانستان میں جہد ...

مزید پڑھیں »

اے ساھگا لیلو جتگ!۔

  ہر شپا درکپاں مراداں گوں دمبراں چنت برا وتی توکا گوں گمانی ھزابی آ بلکیں دانکہ ویرانیں جنگلے بئیت انت من چراگے گماں گوں روک کتیں من ہمے درچک ئے ساھگے آ بوپتیں چو ندارہ کتیں وتی پیما اے ھدا کمو زاہر ا بیتکیں تنگیں مرگے ئے ندارہا ترمپے ...

مزید پڑھیں »

اژما مْریذ دْراہا شتہ

حمید لیغاری اژما مْریذ دْراہا شتہ ھانی دہ اِشتئی بانہڑاں میری سلِہہ گوں جابہاں رِندی تْرا لوھیں کماں ھانی گوں کونجی گڑدنا گڑتو دِہ رِنداں گؤشتغث اژما مریذ دراہا شتہ ٹَپاں وثی پاشینغث براں تلاں گوازینغث درداں چہ ایکا نارغث ھانی زھیراں گوارغث گڑتو دِہ رنداں گؤشتغث اژما مریذ دراہا ...

مزید پڑھیں »

اقلیدس ! زندگی سنو

    دائرہ مرکزِ یعنی مرے دل کے سنگھاسن پر براجمان “تم ” اور دائرے کے تین سو ساٹھ زاویوں پر یکساں پرکار کی طرح گھومتی ہوں میری “میں ” تکون زاویہ قائمہ پر زندگی میں کسی زندہ لمحہ میں ٹہرنے کی کوشش کرتے ہوئے میں ، تم اور وہ ...

مزید پڑھیں »

آخرِ شب کی بازی

آسمان پہ شمال مغرب کی جانب اِک آخری تارہ رات کے آخری پہر ٹِمٹِماتا ہے گو ہزاروں نوری سال کے فاصلے پر ہے پھر بھی اندھیرے اور اُجالے دونوں سے ٹکرتا ہے تُم کہیں پہ ہو اور میں کہیں پر ہوں اَن گنت میلوں کی دوری ہے دوری کا سارا ...

مزید پڑھیں »

پتلون کی زپ

ہم ائر پورٹ گھومتے رہے اور پھر اچانک دیکھا کہ پروفیسر ڈاکٹر سلیم اختر کی پتلون کی زپ کھلی ہوئی ہے وہ ہمارے محترم ہمسفر تھے اسلیے بڑی احتیاط سے انہیں بتادینا ضروری تھا .میں نے 440 وولٹ کے خطرے سے بچاؤ کے پیش نظر بہت ہی میٹھا بن کر ...

مزید پڑھیں »

*

  تھاں تھاں ٹوکا گیراراں مں، گوں من چے کردار کثئے وہاوّ سکون پُلِثو اژ مں زیند منی گرانبار کثئے مروشی اژمن تو دیرائے، تو شہ مئیں دڑداں پوہ نئیے جان گوں دڑداں اِشتو شتغئے، بے ڈوہا مناں گار کثئے زیند گلِثہ رندا تیغا ہچ وختے تئی مہر نوی کُشتئے ...

مزید پڑھیں »

شمُش تئے

  شمُش تئے اے دِہ کارے ایں شکیں بی آزماں بُڑزیں نا ڈیہہ ئے دل ترکّی اُستمان ئے کار مہتل بنت من لبزے یاں شہ رکّاں رِتکغیں روشے گواثانی سرا شِنگیں یہ حرفے یاں منی فہمگ زمانہ ڈِکشن ئے وقت ئے سوالیگیں مئیں وشبو ہیذ،ھونانی نذر بیثہ مئیں زیبائی لِواراں ...

مزید پڑھیں »