مصنف کی تحاریر : انجیلا ڈیوس ترجمہ: سید سبطِ حسن

خود نوشت

  نقلی بالوں کے گچھے سہمے ہوئے خرگوش کی طرح میرے ہاتھوں میں کانپ رہے تھے۔ میں ہیلن کے ساتھ اکیلی تھی، پولیس سے روپوش اور اُس شخص کی موت سے مغموم ۔۔۔جس کو میں چاہتی تھی۔ دو ہی دن پہلے مجھ کو عدالت کے کمرے میں ہونے والے بلوے ...

مزید پڑھیں »

شئیر

  گہے روش روشن پہ اے روزگار گہے شپ کہ وفسی جہاں برقرار گہے سیل وشادی گوں دوستاں اوار گہے روث وفسی مں قبرے تہار گہے گوئہروساڑتی زمستاں اوار گہے سبزگلزارعجب خوش بہار یکے میوہ شیریں یکے زہردار زمیں یک نمونہ و میوہ ہزار کبھی دن ہے روشن کہ چلے ...

مزید پڑھیں »

آئینہ خانے میں ایک پتھر

ایک عجیب خواب سے جاگ جاگ جاتا ہوں آئینوں کے گھر میں، آئینوں کے شہر میں اپنے نام کا اک آئینہ جو پاتا ہوں یہ عکس سارے میرے ہیں یا میں بھی ایک عکس ہوں سایہ ہوں، خیال ہوں یا میں دوسرا ہی شخص ہوں دِکھ رہے ہیں ایک سے ...

مزید پڑھیں »

مزدور عورت

  عورت ورکنگ کلاس کی ایک ممبر کے بطور آئیے ہم محنت کرنے والی عورت کے حالات کا مطالعہ کریں۔ ہم کسان عورت سے شروع کرتے ہیں ۔ اُسے کھیت کے سارے بھاری کاموں سے نمٹنا پڑتا ہے ، رات دن بغیر کسی توقف کے کٹائی کے زمانے میں بھی ...

مزید پڑھیں »

جُست بکن

  تو کہ سَر زُرتہ وتی دست ئے دلا جُست بکن!۔ تو وتی سینگ ئے پُر مہریں گُلا جُست بِکن!۔ تو وتا جُست بِکن!۔ تو مناجُست بِکن!۔ ہر کساجُست بِکن!۔ جُست بِکن!۔ جُست بِکن!۔ تو وتی کوہ وگَراں جُست بِکن!۔ کوچگ و مچگدگاں جُست بِکن!۔ کور و گیابان و ڈلاں ...

مزید پڑھیں »

غزل

کیا پوچھو ہو:“کون ہو آپ؟“ ”آپ ہمارے مائی باپ!“۔   پھانسی پہ چڑھانا ہے کیا؟ لیتے ہو جو گردن کی ناپ!۔   ناچوں میں بھی ٹانڈؤ ناچ، دینا تو مڑدنگ کی تھاپ!۔   آپ کریں جو پاپ وہ پْن، ہم جو کریں وہ پْن ہے پاپ!۔   پاگل ہیں انہیں ...

مزید پڑھیں »

کایا کلپ

  زاہد کی چال ڈھال میں کچھ غیر معمولی نہ تھا۔دھوپ میں سنولایا چہرہ، تیکھے نقوش، مضبوط کاٹھی کا جوان تھا۔ وحید مراد ہیئر سٹائل میں بالوں کی لٹ ماتھے پر ڈالے سارے گھر میں بے تکلفی سے پھرتا تھا۔ رابعہ کے گھر میں سرونٹ کواٹر میں رہتا۔ کچن اور ...

مزید پڑھیں »

ایک معمولی واقعہ

پیکنگ میں آئے مجھے چھ سال ہوچکے ہیں اور یہ عرصہ آنکھ جھپکتے گذر گیا ہے۔ان چھ سالوں میں ایسے بہت سے واقعات گذرے ہیں جن کا میں یا تو چشم دید گواہ ہوں یا لوگوں سے سن رکھے ہیں۔ان واقعات میں میری کبھی بھی میری دلچسپی نہیں رہی،یہاں تک ...

مزید پڑھیں »

خس کم جہاں پاک

محبت کی بھیک مانگتے ہوئے تمہیں چار سال کا عرصہ بیت چکا ہے۔ پھر بھی سلیقہِ گدائی نے تمہارا ہاتھ نہیں تھاما اس خوف سے کہ تمہیں لاج کی پاج رکھنا نہیں آتی۔ تم بھیک میں ملی خوشیاں اک سگریٹ کے پیکٹ یا چائے کی پیالی کے عوض بیچ دیتے ...

مزید پڑھیں »

چور اور بہادر سپاہی

  وہ چور تھا،ایک عقل مند چور۔وہ جب کم سن تھا تب اس نے نابینا گداگروں کے کشکولوں سے پیسے چرائے۔جب جوان ہوا تب اس نے دل چُرائے اور جب بڑھاپے کے قریب ہوا تو اسے پتہ چلا کہ کہیں نوفل کا محل بھی ہے،جہاں پندہ سوبرس پرانی ابوجہل کی ...

مزید پڑھیں »