مصنف کی تحاریر : حسن ناصر

کوکھ

اس کی زور دار چیخیں گویا آسمان پھاڑ رہی تھیں۔ ہونٹ درد سے خشک ہورہے تھے۔ بہت زیادہ رونے چیخنے اورچلانے سے اس کا گلا بیٹھ چکا تھا۔اور وہ اسے اپنی بانہوں میں سختی سے جکڑے ہوئے مسلسل ایک التجا کیے جارہی تھی کہ میں اپنے جگر کے ٹکڑے کو ...

مزید پڑھیں »

جنگ

فوجی گھن گرج اور جاری ہونے والے احکامات کا شور، سگریٹ اور پائپ کا دھواں، میز پر بچھائے ہوئے جنگی نقشے، گہرے سرحدی خطوط، راستے، شہر، سرخ اور سیاہ نشانات، یہاں، وہاں۔۔۔ اچانک ایک شخص نے حملہ کرنے کا حکم جاری کیا۔ چند لوگوں نے اپنے پیر زمین پر مارے ...

مزید پڑھیں »

کانفرنس برائے انسانی حقوق

کانفرنس کا موضوع تھا ’’انسانی حقوق’’ ’’ میرا شوق ہاتھ تھام کے لے اڑا ’’ انسانی حقوق ’’ کی محفل میں معززین کا ہجوم تھا مگر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پچھلی نشستوں پر بیٹھی میں اور میری نادانی ہر تقریر ہر مقالے میں ا نہیں ڈھونڈتی رہی جو انسان کی شکل کے تو ہوتے ...

مزید پڑھیں »

میانمار۔۔۔ انسانیت پہ سیاہ دھبہ

  لگتا ہے ایشیاکے ستارے دائمی طور پر گردش میں ہیں۔ نحوست ہی نحوست ہے ۔ کوئی بات سیدھی بیٹھتی ہی نہیں۔ یہاں کے جمہوری لوگ پاکستان میں مارشل لاﺅں کے خلاف جدوجہد کرتے دونسلیں بِتاچکے ۔ افغانستان اور ایران کے لوگ نصف صدی سے جمہوریت کے قیام کی آرزو ...

مزید پڑھیں »

روس کا انقلاب نمبر ایک……..نیم کامیاب، نیم ناکام

  پارٹی کے اندر مان شویک نامی موقع پرستوں کے ساتھ منا قشے کے اِن سارے جنگی لمحوں میں لینن کی صحت تباہ ہوگئی تھی۔ اس اعصابی جنگ میں اُس کی نیند اور بھوک دونوں اڑ گئی تھیں۔بس ایک اچھی بات تھی کہ خاندان ساتھ ہوتا تھا۔ اس کی باشعور ...

مزید پڑھیں »

سنگت ملک محمد علی بھارا

( ملتان میں اس بچھڑے ساتھی کی تعزیتی ریفرنس پہ ) اس ملک کی سیاست میں 1970سے 1992کے سال بہت مست اور دلبرسال رہے ہیں ۔ یہ دراصل وہی سال تھے جب یہاں زبردست اور ہمہ پہلو نظریاتی جنگ عروج پہ تھی ۔اور ان 25برسوں میں اگر کوئی عوامی اور ...

مزید پڑھیں »

دنیا ہی بدل گئی

پچھلے سوا سال میں تو ہماری دنیا ہی بدل گئی ایک نظر نہ آنے والے وائرس کی بدولت. سونا جاگنا، کھانا پینا، آنا جانا، پڑھنا لکھنا، گھر دفتر، غرض سب کچھ ہی بدل کر رکھ دیا ہے. یہ وبا ہے یا بلا جس نے مسجد ، مندر، گردوارہ، چرچ، کعبہ ...

مزید پڑھیں »

چھن پر و ݨ پلو

چند ر جاڳدیں تیں نندر پئیٗں چھتیں توں ہکو جھئیٗں چپ نال گزردا پیا ہا وقت دی ونڈ توں پہلے دے راز اوندی چپ وچ گم ہن او دریاویں تیں ویرانیں کوں انہاں دے ڄمݨ توں وی پہلے دا ڄاݨدے ایں سانگے انہاں دے اݨ ڳجھے راز اوںکوں پتہ ھن ...

مزید پڑھیں »

بلقیس

  بلقیس۔۔ اے شہزادی! جلتی ہوئی ، قبائلی جنگوں میں گھری اپنی ملکہ کی رخصتی پہ میں کیا لکھوں؟ بیشک،لفظ مُجھے الجھائے جاتے ہیں ۔۔۔ زخمیوں کے ایسے یہاں انبار دیکھوں ٹوٹے ہوئے تاروں کے جیسے جسم ٹوٹے ہوئے شیشے کے ٹکڑوں کے جیسے جسم یہاں میں پوچھتا ہوں، اے ...

مزید پڑھیں »

نیکی کرنے والا انسان

  ایک بلوچی شعر کا ترجمہ ہے کہ : میں نے زندگی ناپ کر دیکھی ہے ۔ اس کی کل لمبائی دو بالشت ہے ۔سی آر اسلم اپنی اسی دو بالشتی زندگانی بِتا کر وفات پاگیا ۔مگر وہ تاریک راہوں کی تاریکی میں کچھ کچھ روشنی گھول کر گیا۔ جاگیرداری ...

مزید پڑھیں »