مصنف کی تحاریر : پروفیسرنجیبہ عارف

سائیں کمال خان شیرانی

باوجود اس کے کہ سائیں کمال خان شیرانی پختونخوا ملی پارٹی کا بنیاد گزار تھا اور میں ایک ٹھیٹ پنجابی۔۔۔ باوجود اس کے کہ وہ ایک سوشلسٹ تھا اور میں پکی عقیدے والی۔مجھے کارل مارکس کی بہت سی باتیں پسند ہیں لیکن ایک دو نہیں بھی پسند۔۔۔ اور باوجود اس ...

مزید پڑھیں »

میری تختی کب سوکھے گی؟

میری حالت ٹھیک نہیں ہے میرے اندر سب آئینے ٹوٹ چکے ہیں دل دہلیز پہ دھول جمی ہے میرے پاﺅں کیوں زخمی ہیں ؟ میری تختی کب سوکھے گی؟ ابھی تو مجھ کو جانے کیا کیا لکھنا ہے لیکن اماں ! یوں لگتا ہے وقت نہیں ہے یہاں پہ برف ...

مزید پڑھیں »

کئے زاں؟              

"سیٹ بیلٹ پلیز سیٹ بیلٹ پلیز” ہوسٹس گوئستغہ شیموشی سندھی لہجہ و دلدوری بھیرو داثئی اشتافی گڑہ، دگا جکثہ نیم راہی آتکئو ہٹکثہ مئیں دیما دیستئی تنسویں مئیں روحا ناکامیں دلہ آہری آ برشکندے کثو چو گوئشتئی ” مونجھ تہ کوڑوئے سینگھی ایں مونجھ تہ کوڑوئے بیلی ایں” مئیں چم ...

مزید پڑھیں »

غزل

(آج کی با شعور عورت کے نام) یوں تو دہلیز پہ لا کر بھی بٹھائی گئی میں دھول تھی راہ گزر کی ،سو اُڑائی گئی میں ایک تکیہ تھی کہ جی چاہا تو سرکایا گیا ایک چادر تھی کہ بستر پہ بچھائی گئی میں اصل تصویر مری تم بھی نہ ...

مزید پڑھیں »

جیئرن جودڑو

امر کی آنکھ کھلی تو سارا جسم پسینے سے شرابور تھا– یہ کیسا خواب تھا جو کئی راتوں سے مسلسل اس کا پیچھا کر رہا تھا ۔ سانولی نازک سی لڑکی جیسے صنوبر کی شاخ ، اس کی کلائیاں تھر کی عورتوں کی طرح سفید کڑوں سے بھری ہوتیں ، ...

مزید پڑھیں »

بھنورے

چند برسوں میں ہی ہمارا نواحی علاقہ اپنا سکون اور چین کھو کر شہر کا مصروف ترین حصہ بن چکا تھا۔ ائیرپورٹ کی طرف جانے والے دو رویہ سڑک کے کناروں پر مارکیٹ،پلازے اور ٹرانسپورٹ کے اڈے بنا دئیے تھے۔ سڑک کے ساتھ جڑے کچے مکانوں کوگراکر مالکان نے گھروں ...

مزید پڑھیں »

میں وہ اور وقت

سفینہ گزشتہ سولہ سال سے کنیڈا میں مقیم ہے۔ عمر اندازاً پچاس برس ہوگی۔ ماہ و سال کی گردش نے اس کا کچھ نہیں بگاڑا۔ خاصی خوبصورت، بلا کی ذہین اور بہت پر کشش عورت ہے ۔اس کے چہرے اور رکھ رکھاو میں کوئی ایسی بات ضرور ہے کہ انسان ...

مزید پڑھیں »

دستخط

وہ ماضی کی اِک تصویر ہے ذہن جس میں ایسے اٹکا ہے کہ گرد و پیش کا سارا نظارا دُھندلا ہے سب کُچھ رُک گیا ہے گُمان ہے، تخیُّل ہے یا اس سے سوا کُچھ اور ہے؟ پُتلیوں میں بھی کوئی جُنبِش نہیں آنکھ شاہد ہے یہ دھوکا کھا نہیں ...

مزید پڑھیں »

سیاھڑ شکاری

سیاھڑ شکاری کے پرنواسہ زبیر مری سے روایت ہے کہ سیاھڑ شکاری مستیں توکلی کے قریبی ساتھیوں میں سے تھا۔ وہ اکثر مست کے ساتھ ہوتا تھا ۔ سیاھڑ شکاری کا اصل نام امیرھان تھا ۔ کیونکہ اس کے جسم میں بڑے گھنے کالے بال ہوا کرتے تھے اس لیے ...

مزید پڑھیں »

ادھا

سب ”ادھا “ کہہ کر بلاتے تھے ۔ پورا کیا ! پونا کیا! بس ادھا۔۔۔ قد کا بونا جوتھا۔ پتہ نہیں کس نے نام رکھا تھا۔ ماں باپ ہوتے تو ان سے پوچھتا۔ جب سے ہوش سنبھالا تھا ، یہی نام سنا تھا اور یہ بھی نہیں کہ کبھی کوئی ...

مزید پڑھیں »