مصنف کی تحاریر : حسن مجتبی

سندھ کے غیر سندھی بولنے والے سندھی کامریڈ

   عزیز سلام بخاری حیدرآباد کے قریب آموں کے باغوں میں گھرے ایک مشہور گاؤں ٹنڈو قیصر میں سرسبز کھیتوں کے بیچ قبرستان میں سنگ مرمر کے ایک چبوترہ نما مزار کی قبر ہے جس پر شاہ عبداللطیف کے سندھی بیت (اشعار) کنندہ ہیں۔ اس گاؤں کے لوگ اس قبر ...

مزید پڑھیں »

شیخ ایاز کی نظم

تم نہ مجھے تسلیم کرو گر مجھ کو تو پرواہ نہیں ہے۔ میں کل کی خاطر لکھتا ہوں جوکہ آخر آنا ہی ہے۔ میلہ برپا ہونا ہی ہے۔ بارش کھل کر برسے گی جب صحرا ریت پہ برسوں گا میں *کارونجھر چوٹی کے اوپر بادل سے ٹکرائوں گا میں۔ (میں ...

مزید پڑھیں »

آخر کوئی بات ہوگی

  ایک دفعہ کا ذکر ہے، اندھیر نگری میں دن دہاڑے ایک لڑکی کو ایک دیو بہانے سے بلا کر گاڑی میں گھسیٹ کر گاڑی چلا دیتا ہے۔ وہ چیختی ہوئی لڑکی گیٹ پر کھڑے چوکیداروں کو نظر نہیں آتی، نہ ہی شاہراہ پہ سگنل پر رکی دسیوں گاڑیوں کے ...

مزید پڑھیں »

اس شہر میں

  اس شہر میں، میں اجنبی یوں تو نہ تھی میرے خدا اس کی زمیں ،اس کے فلک ، اس کی ہوا کو کیا ہوا؟ پہچان میں آتا نہیں، پہچان بھی پاتا نہیں مجھ کو کوئی بدلا ہوا سارا آسماں بے روشنی اتنی مگر کچھ بھی نظر آتا نہیں گھر ...

مزید پڑھیں »

سیمک و نتھا

Saimak O Naththaa   بلوچی قدیم ادب کے اندر خواتین کی زبردست شاعری موجود ہے ۔ مگر سیمک کا لہجہ بالکل جدا ہے۔ اس کاالگ ہی غم الگ ہی طریقے سے بیان کیا گیاہے۔ایسا بیان جس کا تاثر تادیر آپ کے دل کو پکڑے جکڑے رکھتا ہے ۔یوں سمجھیے کہ ...

مزید پڑھیں »

میں، فہمیدہ ریاض اور ”آواز“

  جب ”آواز “پر چھاپہ پڑا فہمیدہ ریاض سے میراپہلا تعلق تو وہ ہے جو ہر نسل کا اپنے پیش روئوں کے ساتھ ہو تا ہے اورمیری یہ بھی خوش قسمتی تھی کہ میں نے اس کے ساتھ اس کے رسالہ” آواز” میں کچھ عرصہ اس کی معاونت کی۔ یوں ...

مزید پڑھیں »

بلوچی زبان کا پس منظر

  بلوچ قوم اور اس کی سب سے بڑی قومی زبان ،بلوچی کی کھوج گذشتہ ڈیڑھ سوسال سے سکالروں ، اکیڈمیشنزاور تحقیق کاروں کے لےے ایک معمہ بنی ہوئی ہے ۔ اصل میں سارے ایشیا کی پوری آبادی کی مائیگریشن تھیوری نے دنیا کو بہت عرصے تک گمراہ کےے رکھا ...

مزید پڑھیں »

*

  اے خالقِ اکبر مجھے توفیق عطا کر غفلت سے بلوچوں کو ذرا پر میں جگا دوں کھو بیھٹے ہیں مردانِ سلف کے وہ روایات پر قصے ماضی کہ انہیں یاد دلا دوں پر چاکر و بیبکر کے نیزوں کی انی سے اغیار کے سینوں میں کئی چھید بنا دوں ...

مزید پڑھیں »

من تو شدم۔۔

  کتنے دن سے ہونٹ صحرا کی سلگتی ریت کے اوپر پڑے ہیں جل رہے ہیں اب انہیں جھرنے پہ رکھ دو کھردری بوری پہ دیکھو جسم کب سے چھل رہا ہے روئی لے کر برف کی اک نرم سا بستر بنادو کتنی مدت سے نہیں سویا سلا دو روح ...

مزید پڑھیں »

ماہنامہ سنگت کا ایڈیٹوریل

ایک گیا ، دوسرا آیا بلوچستان کے کسی فرد کے لیے وفاقی سطح پر پارلیمانی حکومت کے ”بس اور بے بسی “کا حالیہ سارا منظر نامہ حیران کن نہیں ہے ۔ اس لیے کہ جو کچھ وہاں، یا ملک کے کسی دوسرے صوبے میں ہورہا ہوتا ہے ، اُس کی ...

مزید پڑھیں »