مصنف کی تحاریر : علی بابا تاج

کنکر اور آنند

  معبد کا آخری ٹمٹماتا چراغ بھی گل ہوا پجاری کی خاموش مناجات ختم نہیں ہوئی تھی تب مجاور کے ننگے پیر کے نیچے راہداری کی دھول کے اڑنے کی آہٹیں اسے سنائی دیتی ہیں اسے نروان نہیں، آنند چاہیے تھا سو وہ اسے مل چکا تھا اس نے خاموشی ...

مزید پڑھیں »

زندگی کی تلخیاں

لڑکے نے تصویروں کا البم اس کے ہاتھ میں دیا ”تاتہ کے بیٹے کی شادی کی تصویریں ہیں“۔ ”میری تصویریں آئی ہیں کہ نہیں؟“۔ ”ہاں ۔ تمہاری بہت اچھی تصویریں آئی ہیں۔ تمہاری اکیلی والی تصویر بہت اچھی آئی“۔لڑکا گھر سے نکلا، اور وہ آہستہ سے خوشی خوشی اپنا پسندیدہ ...

مزید پڑھیں »

سفر در سفر

(ایک نامکمل نظم) سفر در سفر زندگی کا سفینہ اِک انجان ساحل کی جانب خلاؤں کے صحرا میں محوِ سفر ہے کہ جیسے کوئی ابتدا انتہا کی سمت بس چلی جارہی ہے چلی جا رہی ہے یہ آشوبِ دوراں کے طوفان زدہ گردشوں کے بھنور میں بگولے کی مانند سمے ...

مزید پڑھیں »

ناول ”ہڑپہ “ کا ایک باب

صنوبر ان تین چار برس میں اپنے بدن میں برپا ہونے والی شرمناک تبدیلیوں کی عادی ہو چکی تھی۔ اسے معلوم تھا کہ ہر مہینے کے اختتام پر اسے گندی ٹاکیاں چوری کرنی ہیں۔ یہ ٹاکیاں وافر تعداد میں نہ ملنے کی وجہ سے اطراف بدل بدل کر بار بار ...

مزید پڑھیں »

صحت اور غذا سے محروم خواتین اور بچے

         صحت کے حوالے سے سہولیات تک رسائی ہمارا بنیادی حق ہے مگر بدقسمتی سے صحت کا نظام پورے بلوچستان میں عدم مساوات اور ظالمانہ نظام کو تقویت دیتا ہے جو ہمارے معاشرے میں عدم رسائی اور ترجیحات کی صورت میں رائج ہے صحت کی سہولیات کے ...

مزید پڑھیں »

عورتوں کے حقوق

  مارکس اور اینگلز سوشلسٹ مفکر تھے اور لینن بیسویں صدی کے آغاز میں پہلی سوشلسٹ ریاست کا معمار بنا ۔ اس کا موقف تھا کہ سماج کی نئے سرے سے تعمیر کے لئے لازمی ھے کہ عورتیں مختلف شعبوں میں بھرپور طور پر کام کر رہی ہوں ۔ اپنی ...

مزید پڑھیں »

غزل

  سرِ شامِ شگفتہ خواب جو میں خاک اڑتی ہے یہ کیا دن ہیں کہ شہرِ آرزو میں خاک اڑتی ہے بچھڑنے میں ابھی کچھ دن ہیں لیکن وصل بھی کیا ہے چراغوں اور گلوں کی گفتگو میں خاک اڑتی ہے ہماری تشنہ کامی تو ستاروں تک چلی آئی وہی ...

مزید پڑھیں »

غزل

  بجھ گئے فانوس جب، میں نے دیا روشن کیا اور وہ بھی بر سرِ بامِ ہوا روشن کیا اے دکھوں کی رات! پھر نازل ہو احساسات پر تو نے میری ذات کو بے انتہا روشن کیا چاند تاروں سے کہاں ممکن کہ اندر بھی ہو نور میں نے اشکوں ...

مزید پڑھیں »

تاتاری

  نوشکی اپنی مثال آپ ہے ۔یہ گرما میں اس قدر گرم ہوتا ہے کہ آگ برستی ہے ۔ اور زمستان میں اس قدر سرد ہے کہ دانت منہ کے اندر بھی بجنے لگتے ہیں۔اور اگر واجہ خدا مہربان ہو تو برف بھی پڑتی ہے ۔ اور موسم بہار کی ...

مزید پڑھیں »

زیر تعمیر منگلا ڈیم

  منگلا ڈیم زیر ِ تعمیر تھا۔ صدیوں سے کھڑی پہاڑیاں آہستہ آہستہ غائب ہورہی تھیں۔ پرانے مناظر کی جگہ نئے مناظر اُبھر رہے تھے ۔ نئی نئی شاندار سڑکیں بن رہی تھیں۔ پگڈنڈیاں غائب ہورہی تھیں۔ پہاڑی پگڈنڈیاں جو انسان کے قدموں نے کئی سالوں سے گھڑی تھی۔پہاڑوں میں ...

مزید پڑھیں »