مصنف کی تحاریر : مجید امجد

*

چاندنی میں سایہ ھائے کاخ و کُو میں گُھومیے پھر کسی کو چاھنے کی آرزو میں گھومیے شاید اِک بُھولی تمنا ، مٹتے مٹتے جی اُٹھے اور بھی اُس جلوہ زارِ رنگ و بو میں گُھومیے رُوح کے دربستہ سناٹوں کو لے کر اپنے ساتھ ھَمہماتی محفلوں کی ھاؤ ھُو ...

مزید پڑھیں »

بساط

بساط کیا ہے؟ کسی بھی مہرے کی؟ فربہی، ڈیل ڈول، جْثہ؟ عمل کی قوت؟ بضاعت و کارکردگی؟شکل؟ چھب؟ تناسبِ؟ خطاب، اعزاز، کلغی، وردی،نجابت و نسل و جاہ و منصب کہ نا تراشیدہ، نیچ، اسفل، غلام، گھسیارے، امکے ڈھمکے؟ چلو، چلیں، دیکھیں کیا بچھایا گیا ہے۔۔۔ اپنی بساط پر آج کے ...

مزید پڑھیں »

مئیزل

روشا ٹک ڈاثغ اث۔درشکانی سرا مرگانی چیکار اث۔کڑدے مرگ اے درشکا شہ آں درشکا روغ اثنت۔ اے مڑد بنوے پہناذا آفی ڈُبہ ئے کندھی آ دائیں وپتھغو وھاو اث۔ ایشی ئے راستی وٹاآف کھلی، لٹھ و تھِی گنڈھے ایر اث۔ کمیں دیر ایشی ئے لاغ گومازاں چھرغ اث۔ بز گل ...

مزید پڑھیں »

چھبیس مزدور اور ایک دوشیزہ

ہم تعداد میں چھبیس تھے۔چھبیس متحرک مشینیں ایک مکان میں مقید۔ جہاں ہم صبح سے لے کر شام تک بسکٹوں کے لئے میدہ تیار کرتے۔ ہماری زندان نما کوٹھڑی کی کھڑکیاں اینٹوں اور کوڑا کرکٹ سے بھری ہوئی کھائی کی طرف کھلتیں جن کا نصف حصہ آہنی چادر سے ڈھکا ...

مزید پڑھیں »

چھبیس مزدور اور ایک دوشیزہ

ہم تعداد میں چھبیس تھے۔چھبیس متحرک مشینیں ایک مکان میں مقید۔ جہاں ہم صبح سے لے کر شام تک بسکٹوں کے لئے میدہ تیار کرتے۔ ہماری زندان نما کوٹھڑی کی کھڑکیاں اینٹوں اور کوڑا کرکٹ سے بھری ہوئی کھائی کی طرف کھلتیں جن کا نصف حصہ آہنی چادر سے ڈھکا ...

مزید پڑھیں »

چارلس ڈکنز

چارلس ڈکنز کا نام دنیائے ادب میں کسی تعارف کا محتاج نہیں ہے۔ چارلس وکٹورین ایرا کے لکھاری تھے جن کا بچپن سخت حالات میں گزرا اور اس کی جھلک ان کی تصانیف کے کئی کرداروں میں ملتی ہے۔ وہ معاشرے میں بچوں اور عورتوں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں ...

مزید پڑھیں »

۔۔

اساں پاندھی سچ دے سفریں دے, سچ بول سگیں تاں رّل آ. سک نال صلاح کر سانول کوں , جے گول سگیں تاں رّل آ. ساڈے رلدیں روحیں نال جیکر , روح رول سگیں تاں رّل آ. ایں راہ تیں سالک ساہ لگدے , ساہ گھول سگیں تاں رّل آ.

مزید پڑھیں »

شاہ عنایت ۔۔۔شاہ محمدمری

شاہ محمد مری بلوچستان کی چٹانوں جیسا ہے .جن پر صدیوں کی داستانیں تجریدی آرٹ کی صورت ثبت ہیں _ دانیال طریر نامی شاعر نے اسے کیا خوب بلوچستان کا "شاہ بلوط” کہا ہے. ان چٹانوں پہ پگلی پھرتی اور کبھی شانت ہولے ہولے بہتی ہوا میں آوازوں کی بازگشت ...

مزید پڑھیں »