سچ بولو گے؟۔۔۔۔

انسانوں کے بھیس میں بیٹھے
وحشی کو وحشی بولو گے۔۔۔۔
کٹ جائوگے مر جائوگے
دیواروں میں چنوائوگے
زندانوں میں جل جائوگے
سچ بولو گے؟ مر جائوگے

قاتل۔ بیٹھے جشن منائے
اور مظلوم کا نوحہ ؟
کوئی سن نہ پائے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ظلم کے آگے ڈٹ جائوگے؟ ؟؟
سچ بولو گے؟؟؟ مر جائوگے۔۔۔۔۔

دین دھرم کی باتیں کرتے
سب کے آئینے ہیں دھندلے
سب اسٹیج کے ہیں کیریکٹر
کس کردار کو جھٹلائوگے؟ ؟؟
سچ بولو گے؟ ؟؟ مر جائوگے

اور حوا کی بیٹی کوئی
جب ناموس کی خاطر اپنی
مر جاتی ہے لٹ جاتی ہے
ہر ماں چپ کی چادر اوڑھے ڈر جاتی ہے
سچ بولو گے؟ ؟؟؟ لٹ جائوگے

مر جائوگے۔۔۔۔۔۔۔۔
خاموشی کے مارے لوگو
اپنے آپ سے ہارے لوگو
چپ ہی سادھو۔۔۔۔ چپ ہی سادھو! !!!

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*