دڑد

    ”داں روش مروشی وہشی او ڈکھانی کئیلوخیں کاسغ و درپ کسا ٹاہث نکثہ۔۔۔۔۔اڑے۔۔۔! اڑے۔۔۔! گل و ڈکھی وثی کیفا شہ درکفنت تہ چھیئے ٹاہنت ناں ں ں۔۔۔۔!!!۔۔انا۔۔انا۔۔۔۔ آں کہ کیفا شہ درکفی گڈ آنہی آ ڈکھے نہ خوشی یے۔۔۔۔!“ اے پرنس روڈا گِتھو لیاقت بازار پلوا سر وثی ٹونکاں کنانا رؤغ اث کہ ناغمانی یک کسائیں چکے آ ایشی شلوارا گپتہ۔

اے یہ کسائیں چکے اث۔ نوخی ہپت سالی آں بھورینغ اث۔ سیاہیں رنگ، ڈالیں چم، لیغاریں گذ و چرلیں چپل چپی آپاذ اثنتی۔ ایشی آ چک نیغا دیثہ تہ چکا شلوار پاچہ آر ا سک کنانا گشتہ۔”دہی یے دئے!“ گشے کہ چکا زانتغ اث کہ آنہی آ ڈیوالہ ئے شلوار داشتغ اث۔۔۔ گڈ دہ آنہی آ امیدکثغ اث  نواں چھیئے داث۔۔۔!اے دوئینانی حال دہ گیشترا یہ ڈول اثنت۔

ایشی آ چک چھمانی پلوا دیثہ تہ چکا چم جہل جثغ انت۔ایشی آوثی دوست ئے دروشم گیر آختغنت۔اے جہلا نشتہ۔۔۔وثی خیالانی تہاگار بیثو شثہ۔ دیرہے آچکا نا امیدی آ ایشی شلوار اشتو وثی دگ گپتہ۔۔۔!

”گند۔۔۔۔!دلبند! مناں ایکوی آ میئلے۔۔۔۔ بے تئی مئیں روح ئے بالاذ لافا جالِث نہ کنت۔۔! گند دلبند تہ شہری مڑدمے یے۔۔۔نزاناں تہ  مہر کنوخیں دلانی کیفاں سرپذ بئے یا تہ۔۔۔!“ناغمانی چھِرکے کثو اغدے سار بیثہ تہ دیثئی یہ مڑدے آ کاذغے لافا نغنی درگڑے گوں ناوشے آ گونیں۔۔۔۔! ایشی آرا نغن داثو آں مڑد  چھبو دکانا پیہثہ۔ شئیت اے دکان واژہ اث۔

نغن دستا کثو اغدے رائی بیثہ۔ شہر روانی ایشی روح ڈولا بے چس و قرار اث۔ کسے انگو رؤغ اث کسے آنگو۔۔۔۔! اے وثی دلبند دروشماں پولغ  اث۔”تہ  تہ زانئے تئی دروشم دہ مئیں روحارا قرار دینت۔۔۔! گندغئے تھئی شہر دہ بے قراریں۔۔۔! نی تھئی شہرا چس نئیں۔۔۔تر ا یادیں؟ وختے من تھؤ اے روڈانی سرا اوار ثیں۔۔۔۔! مناں ہماں روش جوانی آ گیریں من ریڑھی سرا ایریں گڈا ئے پاس کثغ اث۔ہماں گڈا لیغار اث۔ ما ہماں ششتغ اث تہ  گلثغ اث۔ تہ  کھندانا ہماں روش گوازینتغ اث۔ مناں ہماں کھندغ گیریں دلبند۔۔۔! ہماں کھندغاں پولغاں!مرشی اے روڈ ورغا پیذاغنت۔۔۔!“ تریں نغن و ناوش ایشی پیروھانڑ دامنا چرپ کنانا روگ اث۔ناورشانی زڑدیں روغناں ایشی پیروھانڑ سرا  یہ پٹو ئے ٹاہثغ اث۔

ورنائیں مڑدے، سیاہیں رنگ، سہریں چھم، زڑدیں دتان سیاہیں جوڑ، اڑثغیں پھٹ،لیغار و دڑتغیں گڈائے گڑدنا ناغمانی ایشی دیما کھوشتی۔۔۔۔”حذائی ناما چھیئے دئے“ورنایا صدائے جثہ۔”من وث تئی ڈولیں مڑدے آں من تھرا چھیئے داث کناں؟مناں گوئر چھیئے استیں؟“ ورناایشی نغن نیغا گندانا گشتہ”ہمے نغنا دئے!“

بیگھن بیثہ اے گڑتہ۔۔۔! اے روڈ سرا مزائیں سواری او مچھی یے اث۔ ہرکہ وثی مئیزلانی پلواں رؤغ اث۔ چھو کہ بیگھناں مرگ وثی کُڈیاں گڑداں۔۔۔!”من بکھو روغاں۔۔۔؟مناں تہ لوغ نے۔۔۔۔مئیں ہند مئیں خیالنت۔۔۔مئیں دلبندئے یاد نت۔نی منا ہمانگو برنت من دہ ہمانگو رواں!“ ناغمانی ایشی نغاہ مچھی یے سرا کپتہ۔

مچھی آ سر بیثہ یہ زالے تنگو دروشمیں بچے سرا نشتو گریئغ اث۔یک یک کنانا مچھی سستہ۔زال گریئغ دہ کم بیثہ، پر آنہی انڑزی حشک نویثغ انت۔ اے زالا گوں پھجی آ نشتو آنہی آ گندغ اث۔۔وخت وختے زال چکا را دست جنت گندیث۔ ”اب با!۔۔۔بنگو۔۔!موریں بچّ۔۔! کھڑوبی۔۔!،مئیں روح،۔۔۔مئیں ساہ ثمر۔۔۔مئیں دلبند۔۔۔! کھڑوبی!

”دلبند!“ ایشی آ اولی دھکا زالا شہ پول کثہ۔ نکھو آ ایشی پلوا انڑزیاں ہِیر دیانا سغر لوڈینتو ”ہا“ کثہ۔۔۔! ”مئیں ایکویں بچ۔۔۔مئیں ساہ، مئیں چک!“ اغدے نکھو گریئغ و موختانی گشغا شروع بیثہ۔ پیریں زالا را گرے آنا دیثو، ایشی انڑز گلے دہ کپتہ۔

روش کوہ پشتا گار بیثغ اث۔ شہر رنگ رنگیں بتیاں شہ روش بیثہ۔ شہر ئے گند و کچہرہ تہاری لافا گیر بیثغنت۔ نی بتیانی  روشنی سرا شہر جلشکغایث۔نکھو چک سرا وختے گریئیث، وختے پھْنڑکیث۔۔۔! اے نشتو وختے نکھو ڈکھان گندیث وختے وثی غماں گیراریث۔”دلبند! مرشی من زانتہ کہ مئیں ڈکھاں شہ تھی مزائیں ڈکھ دہ استنت۔ دلبند! من تھئی دِیری لافا باز دڑدی بیثغاں پر مناں مان کئیث کہ اے نکھو ڈکھ شہ مئیں ڈکھاں گیشنت۔“اے وثی خیالانی لافا ٹونکاں شروع بیثہ۔۔۔۔! ناغمانی یہ کارموٹر و یک ایمبولینسے کئیث۔۔۔چک زیرنت۔نکھو گوں کھاڈے آ امبازاں کویث، ہڑدوئیں گریئنت۔۔۔۔۔! نیٹ دوئیناں چپ کثہ۔

نکھو سرین بستو کارا نشتہ۔ کار رائی بیثو جکثہ۔ یک مڑدے کارا شہ ایر کپتو ایشی نیغا آختہ۔ پنچ صذی یے کشتو داثئی۔۔۔گڑتو شثہ۔۔۔وثی او نکھو غمناں کچانا گشتی”اِنا! مئیں غم شہ نکھو غماں گیشتریں۔۔۔غم کچغ نہ بنت۔۔۔۔نکھو غم مری۔۔۔مئیں غم مناں ہر کشنت۔دلبند۔۔۔! ہر کسی غم ہر کسا پہ گشینیں۔۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*