ماہانہ محفوظ شدہ تحاریر : نومبر 2020

دو فرلانگ لمبی سڑک

کچہریوں سے لے کر لا کالج تک بس یہی کوئی دو فرلانگ لمبی سڑک ہو گی ہر روز مجھے اسی سڑک پر سے گزرنا ہوتا ہے کبھی پیدل کبھی سائکل پر سڑک کے دونوں طرف سوکھے سوکھے اداس سے درخت کھڑے ہیں ان میں نہ حسن ہے نہ چھاؤں. ٹہنیوں ...

مزید پڑھیں »

لڑکی وہ آسمانوں جیسی

آسمان ایک عجب استعارہ ہے ناممکنات کو چھو لینے کا سرفرازی و معرکہ آرائی کا، رازوں بھرا، اساطیری کہانیوں، تخلیقی افسانوں، مسخر کرنے، کھوجنے اور دعوتِ مبارزت دینے والا بلیغ استعارہ، جو سمو لیتا ہے خود میں ہر ایک کو اپنی پنہائیوں میں اپنے آفاق میں۔ کیا کو ئی زمینی ...

مزید پڑھیں »

کھول دو

سماج اِک ہوس زدہ جسم ہے اس کی ٹانگوں کے درمییاں جھولتے پنڈولم کا گندا پانی ہر گلی اور ہر قریہ میں بکھر گیا ہے پھولوں سے کانٹے چمٹ کر نازُک پتیاں چھید ڈالتے ہیں کانچ کے ٹُوٹے کھلونے ہر طرف بکھرے پکڑے ہیں پاپ کی نجاست سے گٹر اُبل ...

مزید پڑھیں »