ماہانہ محفوظ شدہ تحاریر : ستمبر 2020

ٹکڑیاں (چھوٹی نظمیں)

۔1۔کشتی جل جاؤ۔۔۔۔۔ جاؤ۔۔۔۔۔۔ چاند کے پار۔۔۔۔ اک ندیا بہتے پانی کی۔۔۔۔ نیند کی لوری گاتی ہے۔۔۔۔ ۔2۔ایک لمحے کی رات رات کا ظلم سہا جنگ تاروں سے لڑی چاند چپکے سے ہنسا نیند حیران کھڑی خواب خاموش کھڑے سوچ کیسی ہے گھڑی ۔3۔منظر، خدشہ، احساس اور آس آدھی آنکھیں ...

مزید پڑھیں »

انقلاب

کتاب : چے گویرا مصنف: ڈاکٹر شاہ محمد مری صفحات: 120 قیمت: 200 روپے مبصر: عابدہ رحمان ڈاکٹر شاہ محمد مری صاحب کی کوئی بھی کتاب اٹھا کر پڑھیں ، چاہے وہ ان کی اپنی تخلیق ہو یا پھر کسی کتاب کا ترجمہ، اس میں آپ کو ان کی فکر، ...

مزید پڑھیں »

انقلاب

کتاب : چے گویرا مصنف: ڈاکٹر شاہ محمد مری صفحات: 120 قیمت: 200 روپے مبصر: عابدہ رحمان ڈاکٹر شاہ محمد مری صاحب کی کوئی بھی کتاب اٹھا کر پڑھیں ، چاہے وہ ان کی اپنی تخلیق ہو یا پھر کسی کتاب کا ترجمہ، اس میں آپ کو ان کی فکر، ...

مزید پڑھیں »

پْٹ منی بیہوبورئے ڈولنت

دل منی سوزیں بڈنڑے دانی بْت پہ بالاذا نہیل بیثہ دل دنی بازیں اٹکلاں زانی روح چو برین آسکئے ڈولیں ڈوبرئے نیاما َ تھاں رنگا مانی جزغا لوٹی مست ہم گاما جوسراں دیثیں سملئے بانہی درژبر و میوہ شام بیہو اے ساڑتتیں سوما آف برانی. ما کثیں دیوانے مریذحانا اشکثیں ...

مزید پڑھیں »

جبرواختیار

زیندھئےمقراریں دگے اغراراں مشتغیں انڑ دگے گٹاں راستغاں ہم گرنچیں گواشاں رستراں سرگواثاں میشاں میشلاں مہ تاباں مستاں مہلباں مرگ پینچاں مارکساں مسنداں موسیقاں ماراں مسواں مسکیفاں اسراراں عجب رنگیناں عاشق ٹوہو، رائی چاری زیندھ یہ لکاں بوٹی اے زیندھ یہ باراں بازی اے ایذااختیار مختیار مقراریں ایذا انہ و ...

مزید پڑھیں »

زنگ آلو د زنجیریں

"سپارٹیکس” ہاورد فاسٹ کا شاہکار ناول جس کا 80 سے زائد زبانوں میں ترجمہ ہو چکا ہے۔ اردو میں اس ناول کا ترجمہ ڈاکٹر شاہ محمد مری نے کیا ہے۔ ـــــــــــــــــــــــــ ’’سپارٹیکس‘‘ حال اور ماضی میں لکھا ہوا ناول ہے۔ ناول کا مرکز ی خیال دنیا میں زندہ انسان کی ...

مزید پڑھیں »

شاعری

جانتا ہوں کہ وہ وقت آئے گا جب مری شاعری کو اچانک کبھی چاند آکاش گنگا میں نہلائے گا جانتا ہوں کہ وہ وقت بھی آئے گا جب زباں کا تعصب نہ ہو گا کہیں میری خوشبو سے ہر اک مہک جائے گا جانتاہوں کہ وہ وقت بھی آ ئے ...

مزید پڑھیں »

میں نے اپنی ماں کو قطرہ قطرہ پگھلتے دیکھا!

امی بہت شاندار عورت تھیں، زندگی کی حرارت سے بھرپور، بہت شوقین مزاج۔ انھوں نے زندگی کو بھرپور جیا اور کیا خوب جیا۔ اور میں نے ایسی خوب صورت شخصیت کو قطرہ قطرہ پگھل کر تحلیل ہوتے دیکھا، ان کی طبعی موت تو جنوری میں ہوئی مگر اصل میں وہ ...

مزید پڑھیں »

بھوک کے راستے حملہ کرتی محبت

کیا تم پہچانتے ہو رات کے آخری پہر عورت کے چہرے کی تھکن کو شطرنج کے آخری پیادے کی خوشی کو جب وہ دشمن کے پہلے خانے پہ قابض ہو جاتا ہے کیا تم نے کبھی سنی ہے حوصلے کی ٹوٹتی کڑیوں کی کراہ جس کے بعد دھڑکنیں زنجیر میں ...

مزید پڑھیں »