Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » پوھوزانت » بلوچی زبان ئے دیوان ۔۔۔ گام گثیر

بلوچی زبان ئے دیوان ۔۔۔ گام گثیر

بلوچی زبانئے  دیوان

کمال خان شیرانی،ڈاکٹر خدائیداد اور عبداللہ جان جمالدینی پراگریسو رائٹر ز کے بعد بہت عرصہ تک غوروفکر کرتے رہے۔ بالآخر انہوں نے یہاں کی اپنی مخصوص صورتحال کا اندازہ لگالیا اور روشن فکر ادبی تحریک کو مقامی رنگ دینے کی ٹھان لی۔جذبات اور آئیڈیلزم اپنی جگہ، مگر  جغرافیائی خطے تواپنی  اپنی خصوصیات اور خصلتیں رکھتے ہیں۔ بلوچستان خود اپنے رنگ و بو میں مدغم کیے بغیر الفاظ، اصطلاحات اور نظریات کی نقل خوری کو کبھی اچھا نہیں سمجھتا۔ لہٰذا تنظیم کے مافیہ کی سلامتی کے لیے معروض نے اس کی ہیئت کی تبدیلی کا حکم دیا اور تب یہیں لٹ خانہ کے اندر خدائیداد کے ذریعے ”پشتو ٹولی“ بنی اور 1950 ہی میں عبداللہ جان نے ”بلوچی  زبانئے دیوان“ قائم کیا۔ دیوان کا صدر گل خان نصیر، نائب صدر غلام محمد شاہوانڑیں جنرل سیکریٹری عبداللہ جان جمالدینی، پریس سیکرٹری عبدالکریم شورش، خزانچی قاضی غلام محمد الدین اور جوائنٹ سیکرٹری انور طالیانی بن گئے۔

یہ دونوں تنظیمیں کوئٹہ میں بنیں۔ بلوچستان کا رنگ لیے اب یہ تنظیمں، اپنی جڑیں گہری اور توانا کرتی چلی گئیں۔

محققین نے بلوچی زبانئے دیوان کا منشور ڈھونڈ نکالا:۔

 

 

دستور العمل

بلوچی زبانئے دیوانئے

دفتر:بھیک چند روڈ۔کوئٹہ

 

نام

دفعہ1۔ اے دیوان ئے نام ”بلوچی زبان ئے دیوان“انت۔

مُرادو مطلب

دفعہ 2۔ اے دیوان ئے  مزنیں او وزنڈ یں مطلب بلوچی زبان ئے خذمت کنگ اِنت

۔ (الف) اے دیوانا سیاسی کاران گوں ہچ سروکار نیست۔

۔ (ب) اے دیوان کہنیں بلوچی شعرانی ونوکیں شاعرانی گفتار ئے پدورند ا  جنت۔ مچش کنت وچھاپش کنت۔

۔ (ج) بلوچی زبان ئے مختلف ایں بولیانی مطالعہ کنت ویک شریں وسیع ایں زبان ئے تیار کنت۔

۔ (ق) بلوچی زبان ئے یک جوانیں آسانیں وموجود ہ حالتانی مطابقا رسم الخط ئے ٹاہینیت ورواج دنت۔

۔ (ر) کہنیں خاصیں (ٹھیٹھ) بلوچی ئے لوزاں، متلان وہر روچیائی(روز مرّہ)پٹ ولوٹ ءَ کنت و دوارہ بلوچی بولی ئے تہا رواجش دنت۔

۔  (س) علمی و ادبی ضرورتاں پہ نوکیں لوظ جوڑ کنت و بلوچی بولی ئے تہا ہوارش کنگ ئے کوششہ کنت۔

۔  (ص) بلوچی صرف و نحوئے کار ا دستہ گیرت ِ و بلوچی زبانا دگہ زبانانی قواعد ئے وڑا جوڑ کنت۔

دفعہ 3۔ بُرز ئے دفعہ 2ئے  مطلب و مرادانی حاصل کنگا پہ دیوان:

(1) ہفتہ وار مجلس کنت۔

۔ (ب) اے رنگ ئے مجلسائی تہا بلوچی ادیبانی ادب ئے سر ا تنقید و تبصرہ کنت۔

۔ (ج) ادیب ممبروتی تیارکُرتگیں مضامینان واننت وآیانی  سر ا تنقید و تبصرہ کنگ بیت۔

۔ (د) یک کتاب خانہ ئے جوڑ کنت کہ آنہی تہا بلوچی ادب ئے متعلق ئے کتابانی علاوہ دگہ کتاب ہم ممبرانی وانگا پہ ایرکنت۔

۔ (ر) یک بلوچی رسالہ ئے منظوری آ گیرت و بلوچی زباناچھاپ کنت تاکہ آنہی ذریعہ آ بلوچی نوشتگ و وانگ عام بیت او دیوان وتی ادبی سرگرمیاں چھاپ بکنت۔

۔ (س)، سال بسال دیوان وتی یک سالانہ مُچّی ئے لوٹیت

 

مرکزو شاخ

دفعہ4۔ اے دیوان ئے مرکز کوئٹہ انت۔

دفعہ 5۔ اے دیوان ئے شاخ بلوچستان ئے ہر شہر ا قائم کنگ بنت۔

ممبری

دفعہ 6۔ ہر بلوچے کہ دیوان ئے دستور اگوں متفق بیت دیوان ئے ممبر بوت کنت۔

منصب دار

دفعہ 7۔ اے دیوانئے  سر پرستے بیت کہ آئی فیصلہ دیوان ئے مجلس کارکنت۔

دفعہ 8۔علاوہ چہ سرپرستا دیوان ئے منصب دارانی تعداد کل شش بیت،واے رنگ:

سروک                                صدر

جانشین                        نائب صدر

کاردار                 سیکرٹری

جکش                  جائنٹ سیکرٹری

صندو خدار         خزانچی

۔کتاب پان             لائبریرین

پڑوچی                       پروپیگنڈاسیکرٹری

دفعہ 9۔ اے دیوان ئے مجلس کارے بیت کہ آچنگ بیت: اوممبرانی کل تعداد9انت۔

انتخابات

دفعہ 10۔ ہر سال ماہ مئی آ انتخابات بنت۔ او ہما ماہ ئے آخرا نوکیں منصب دار وتی ذمّہ داریاں دست گرنت

منصب دارانی فرائض اختیارات

دفعہ11۔ سرپرست دیوان ئے سرپرستی ءَ کنت۔

دفعہ 12۔ دیوان ئے سروک کچہری ئے سروکی ءَ کنت وآنہی غیر حاضری ءَ جانشین کرسی صدارتا پرکنت۔

دفعہ 13۔ کاردار دیوان ئے دفتر ئے ذمّہ دار نت او سروک ئے دیماپہ ہر کار ا جواب دہ انت۔

دفعہ 14۔ کاردار پداچ سروک ئے منظوریا چہ دیوان ئے حسابا پہ دیوان ئے خرچا زر زرتہ نست کنت۔

دفعہ15۔ کاردار ئے  غیر موجودگی آ کاردارئے درست ایں کاراں چکش کنت۔

دفعہ 16۔ صند و خدار دیوانئے حسابا ایر کنت و سروک او مجلس کار ئے گشگا پہ حسابا پیش کنت۔

دفعہ 17۔ کتاب پان دیوان ئے کتاب خانہ ئے خیالاکنت و ذمہ دار نت۔

دفعہ 18۔مجلس کار تمام مزنیں کارانی خیالداری آ کنت مثلاً بجٹ،رسالہ،کتاب خانہ۔وغیرہ وغیرہ۔

دفعہ 19۔پڑوچی ئے کار دیوان ئے کارانی نشرو تالان کنگ اِنت۔

دفعہ 20۔ مجلس کار ئے آ کورم کل ممبرانی سیمی بحرانت۔ اچ ایشی کم مجلس نشت نکت۔

مالیات

دفعہ21۔ چہ دیوان ئے ہر ممبر ا یک کلدارے ماہوار چندہ گرگ بیت۔

 

دفتر

دفعہ22۔ دیوان وتی جتائیں دفترے پچ کنت۔

دستور ئے  تہا ترمیم کنگ

دفعہ 23۔ حسب ضرورت مجلس کار او دیوان ئے ممبرانی خواہشا پہ دستور ئے تہا زیات و کم کنگ بیت۔

دفعہ24۔ دیوان ئے دستورئے تہا ترمیم (زیات وکم) 2/3 ممبرانی کثرت رائے آ پہ کنگ بیت۔

Check Also

ہفت روزہ عوامی جمہوریت ۔۔۔ ڈاکٹر شاہ محمد مری

۔19فروری کے ”عوامی جمہوریت“کے گلابی سرورق پہ سید مطّلبی فرید آبادی کی شاعری ہی کو ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *