Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » پوھوزانت » سٹیٹ و انقلاب ۔۔۔ ولادیمیر

سٹیٹ و انقلاب ۔۔۔ ولادیمیر

۔2۔سلح بندیں مڑدانی اُڑد، زیل خانہ وغیرہ

اینگلز دیمہ لکھی:۔

 

”کہنیں برادری نظامہ (1) برخلاف سٹیٹ وثی رعیتہ اُلکہ وعلاقہانی حسابہ بہرہ کنت۔۔“

مار ہمے بہر قدرتی معلوم بی، پر اشی قیمت کہنیں تنظیمہ خلافا یک دراژیں جُہدے اث کہ نسلانی نسلّاں یا قبیلہ آں دَہ چلتہ۔

”۔۔۔دوہمی خاصیں دروشم یک پبلک حاکمی اے جاری کنغیں کہ یک سلح بندیں طاغتے حیثیتا منظم کنوخیں مخلوقا گوں سدھائی آ یک رنگ مہ وی۔ ہمے خاصیں، پبلک حاکمی ضروری ایں پچیکہ کلاسانی اندرا بہر بیغہ وختا ژہ آبادی ئے وث کاریں سلح بندیں تنظیمے ٹاہینغ ناممکن بیثہ۔۔۔ ہمے پبلک حاکمی ہر سٹیٹ اے رونگھو (ضمیمہ) دِہ استنت، جیل خانہ دِہ، او ہر ڈولیں تشدد ئے ادارہ دِہ کہ ہمے کُل کہنیں قبائلی سماج ءَ پجھ دِہ نیاڑ تنت۔۔۔

اینگلز ہماں ”طاغت“ ئے خیالہ بیان کنت کہ سٹیٹ گشنتی، یک ہمنگیں طاغتے کہ پیدا تہ سماجہ اندرا بیثہ پر، وثار شہ ہمشی آ بڑز داشتئی اور شمشی آوثار زیاتاں زیات بیگانہ کثئی۔ ہمے طاغتہ اندرا مزائیں شئے چے ایں؟۔ اشی اندرا سلح بندانی خاصیں ادارہ استنت کہ آنہانی حکمءَ شیرا جیل خانہ وغیرہ استنت۔

ما سلح بندیں مڑدمانی خاصیں اُڑدانی بارہا ٹوکہ کنغہ حق ءَ داروں، پچیکہ پبلک طاغت کہ ہر سٹیٹ ئے یک خاصیتے، سلح بندیں آبادی آ گوں، او آنہی“ وث کاریں سِلح بندیں تنظیما“گوں ہچ”سِدھائیں یک رنگی ئے نہ داری“۔

سجہ ایں مزائیں انقلابی مفکرانی ڈولا اینگلز کلاس شعور داریں مزدورانی دلگوشہ ہماں پلو ءَ کنائینی کہ فِلسٹن ازم آنہی پلو ا کمڑد ولگوشہ لائخہ دِہ نہ گنڑیں، ہنچشیں عامیں ٹوکے ہمنگیں تعصباں گوں مقدس ٹاہیں تغیں اے گنڑیں ثی کہ ڈونگھا دِہ استنت او گوئش کہ سڑثغین انت دِہ۔ سٹینڈنگ آرمی او پولیس سٹیٹ پاورءِ کلاں ژہ مزائیں ہتھیار نت۔ پر، اشیاسوا دوہمی چے بیثہ بی؟۔

نوزدمی قرنہ آخر ئے یورپی آنی مزنیں اکثریتے خیالا، کہ اینگلز ہماہاں گوں ٹؤ کایث، او کہ آنہاں مزائیں یک انقلابے دِہ نہ ئیثغث او نئیں کہ شما نہیا گوئستغثنت، شمشی آسوا دوہمی ہچ بیثہ دِہ نہ ویث۔ آں اصُل پوہ نہ ویثنت کہ ”آبادی ئے وث کاریں سلح بندیں تنظیم“ چے اے اث۔ وختیکہ پول کثیں کہ سماجا ژہ بڑزا سلح بندانی خاصیں ادارہ (بزاں سٹینڈنگ آرمی او پولیس) ئے چے ضرورت اث، او آنہاں سما جاژہ بیگانہ بیغئے چے ضرورت اث، تو ویسٹرن یورپ او روسی فِلسٹین میخائلو وسکی یا سپنسرا ژہ پورزڑتغیں کڑدے جملہ گشنت، کہ آنہانی مطلب سماجی زیندھئے گیش بیوخیں پیچیدگی، او کارانی اندرا تفریق وغیرہ بی۔

ہمنگیں حوالہ ”سائنسی“معلوم بی۔ او مزن و بنیادی واقعہ بزاں صُلح بیثہ نہ دیوخیں متضاد یں کلاسانی اندرا سماجئے بہری ءَ مژارو کنت وتنک نظریں مڑدمہ لولیاں داث وہاو  باڑت۔

اغرہمے بہر مہ ویثیں تو آبادی ئے ”وث کا ریں سلح بندیں تنظیم“ وثی پیچیدگی آگوں، وثی بڑزتریں ٹکٹیکل لیو لا گوں، لَزڑتغیں بھولُو آنی گلیسغ یا قدیمیں انسانانی یا قبلہ آنی اندرا مڑدمانی قدیمیں تنظیما ژہ بڑز بیث۔ پر ہمنگیں تنظیمے دانڑتی دِہ ممکن استہ۔

اے ناممکن ایں، اے خاطرا کہ سولائز یں سماج متضاد، او اغدہ صُلح نہ وی اوخیں متضادیں کلاسانی اندرا بہریں، کہ ہمانہانی ”وث کاریں“ سلح بندی آ“ ژہ آنہانی نیاما سلح بندیں جہد بیث۔ یک سٹیٹ اے پیدا بی، سپیشل ایں حاکمی اے پیدا کنغہ بی، سلح بندیں مڑدانی سپیشل ایں حاکمی اے پیدا کنغہ بی، سلح بندیں مڑدانی سپیشل ایں ادارہ، اوہر انقلاب سٹیٹ مشنری ءَ تباہ کناناں، مارکیندریں کلاس جہد ءَ ڈسی، صاف صافی ءَ مارڈسی کہ حاکمیں کلاس وثی خدمت کنوخیں سلح بندیں مڑدمانی سپیشل ایں ادارہانی بحالی ءَ پہ شوں زور ءَ جنت، او محکومیں کلاس اے ڈولیں نوخیں تنظیمے پیدا کنغہ پہ شوں زورہ جنت آں کہ لٹوخئے نہ بلکہ لٹے جیوخئے خدمتہ کنت۔

ہمے بڑزی دلیلہ اندرا، اینگلزا ہماں معاملہ نظریاتی ڈولا زڑتہ آں کہ ہر مزائیں انقلابے مئے اگھا او شیشی ءَ، عملی او مزید برآں عوامی یکشنہ صورتہ کڑو کنت، بزاں سلح بندیں مڑدانی ”خاصیں“ ادارہ او ”آبادی ءِ وث کاریں سلح بندیں تنظیم“ ءَ نیاما آپتی تعلق ءِ معاملہ۔ ماگندوں کہ ہمے معاملہ یورپی او روسی انقلابانی تجربہ آں خصوصی ڈولا بیان کثہ۔پر، ما اینگلزہ بیانہ پلوا گڑدوں۔

آنہیا ڈسثہ کہ وختے وختے، چوکہ قطبی امریکہ ءِ کڑدے علاقہاں ہمے عوامی حاکمی نزوریں (آنہی دلا اے کپٹلسٹ سماجہ لافا یک کزینہی استثنائے، اور قطبی امریکہ ئے ہماں بہر امپیر یلزما ژہ پیشی وختا نی انت اوذکہ آزادیں کالون اسٹانی قوضہ اث) پر ہمے، عامیں صورتا زیات طاغتور بیاناں روغیں:

۔۔۔ عوامی حاکمی اے حدا داں مضبوط بیاناں روث، ہمانکر کہ سٹیٹ ءَ اندرا کلاس تضاد زیات سنگین بیاناں رونت، او ہمانکر کہ اوارو نزیکیں سٹیٹ زیات مزن او زیات آبادی والا بیاناں رونت۔ مار چڑو نِیں ایں یورپ گندغی ایں، اوذکہ کلاس جُہداو فتوحات ئے مقابلہ آ عوامی حاکمی ہماں بڑزغاں دَہ بڑتہ آں کہ سجوئیں سماج او حتی کہ سٹیٹا دِہ لوہڑ غئے دھڑکو آ دیغیں۔۔“

ہمے گوئستغیں صدی ئے دَہمی دھاگئے سری سالانی اندرالکھے جیثہ پچیکہ اینگلز ئے آخری پری فیس چکا شانزدہ جون 1891در جیں۔ ہماں وختا امپیریلزمہ پلوا موڑ (بزاں ٹرسٹانی پیلویں قبضہ، مزائیں بینکانی حتمی طاغت، یک مزں پاندیں کالونیل پالیسی وغیرہ وغیرہ) دانڑتی چڑو فرانسہ اندرا شروع بیغایث، او حتی کہ قطبی امریکہ او جرمنی اندرا دِہ نزوراث۔ شماں وختا ”فتوحات کنغئے مقابلہ آ باز مزنیں بلانگے (گامے) زڑتہ، اے سببا دِہ کہ گیستمی صدی ئے دوہمی دھاگئے شروعا دنیا ہمے ”مقابلہ کنوخیں فاتح آنی“ (بزاں لُٹ پل کنوخیں مزنیں پاورانی) اندرا پیلوی آ بہر بیثہ۔ شماں وختاں ملٹری او نیوی ئے سلح بندی حدا زیات ودھثہ او دنیا چکا انگلینڈ یا جرمنی ئے قبضہ آپہ، لٹ وپل ئے بہرا پہ 1914-17ئے برباد کنوخیں جنگا حالت داں اے حدا پجینتہ کہ ظالم وزوراخیں سٹیٹ پاور سماجئے سجہ ایں طاغتاں ”لوہڑی“ او بالکل برباد کنت۔

اینگلز اتہ پیڑ 1891اندرا ڈسثہ کہ ”فتوحاتانی مقابلہ“مزائیں پاورانی خارجہ پالیسی ئے یک اکیلائیں اہم ایں خاصیتے او سوشل شاونسٹیں لُچاں آں 1914-17اندرا وختیکہ ہمے مقابلہ باز ڈوڑ ودھثہ او امپیر یلسٹ جنگ پیدا کثہ ”وثی جندہ“ بورژوازی ئے رستریں مفادانی دفاع  ”ماثی وطن ئے دفاع“ ”رپبلک وانقلابہ دفاع“ وغیرہ ئے ڈولیں لفظاں گوں کثہ!۔

ماربایدیں اے دِہ نوٹ کنوں کہ اینگلز پیلویں یقین او باورا گوں رایہ دیغئے عامیں حق (Universal Sufferage) ءَ دِہ بورژوا اقتدار ئے سندرے گشی۔ جرمن سوشل ڈیموکریسی ئے، دراژیں تجربہ آ گنداناں آں گشی کہ ”رایہ دیغئے عامیں حق ”وررکنگ کلاسئے پختگی او بالغی ئے پیمانہ ایں۔ مروشی ایں سٹیٹ اشیاژہ زیات نئیں داثہ کنت او نہ کہ داث۔

مئے سوشلسٹ ریوولیوشنریز او منشویک،او آنہانی جاڑیں براث بزاں ویسٹرن یورپئے  سجہ ایں سوشل شاونسٹ او  اپرچونسٹ دِہ ہمے رایہ دیغئے عامیں حق ءَ ژہ ”زیادہ“ ئے امید ءَ دارنت۔ آں وث دِہ ہمے خیالہ واژہ انت او مخلوقئے دماغانی اندرا دِہ ہمے غلطیں خیالے نندیننت کہ رایہ دیغئے عامیں حق”مرشی ایں سٹیٹ ءَ اندرا“ ورکنگ استمانئے اکثریت ئے رایہ ءَ ڈسی او اشرا حقیقت ٹاہینغ ئے واقعی لائخا ایں۔

ماایذا چھڑو ہمے غلطیں خیالہ طاہر کثہ کنوں، چھڑو اشارہا کثہ کنوں کہ سوشلسٹ پارٹیانی پروپیگنڈہ او ”آفشل“ (بزاں اپرچونسٹ) ایجی ٹیشن ءَ اندرا ہر گامہ چکا اینگلز ئے ہمے بالکل بگی ایں بیان اوار سوار کثی ایں۔ ہمے خیال ئے ختمی درو غ ئے دراژیں ورداس کہ اینگلز ا رد کثہ، مادیمارواناں ”مروشی“ ایں سٹیٹہ بارہا مارکس او اینگلز ئے خیالانی سلسلہ ءَ دوں۔

اینگلز وثی کلاں ژہ مشہوریں کتابہ  اندرا وثی خیالانی عامیں خلاصہ ءَ اے لفظاں گوں داث:

”سٹیٹ ازل ءَ ژہ موجودنہ یث۔ ہمنگیں سماج استنت کہ اشیا بغر چلثغنت، کہ سٹیٹ وسٹیٹ اقتدار ئے ہچ سمانہ یث اش۔ اکنامک ترقی ئے یک خاصیں سندھوئے آ، کہ سماج ئے کلاسانی اندرا بُھرغاگوں لازمی بستی آیث، سٹیٹ یک ضرورتے ٹھیثہ۔ مانیں اشتافی پیداوارہ ترقی ئے سٹیجے آپجغاؤں کہ اوذا ہمے کلاسانی وجود یک ضرورتے سرنہ ییث، او دوھمی اے کہ پیداواراپہ پکوئیں ڈھنگرے دِہ ٹہی۔ ہمے کلاس کفنت دِہ ہمنگا،ہمانگے کہ پیشی مرحلہءَ چکا اُبھرثغ اثنت۔ ہمشاں پجی ءَ سٹیٹ دِہ لازمی کفی۔ سماج کہ پیداوار کنوخانی یک آزاد وبرابریں ایسوسی ایشن ئے بنیاد ا پیداوار ئے دوار انتظام گیری ءَ کنت، سٹیٹ ئے سجہ ایں مشینری ءَ ہموذہ ایرکنت او ذکہ آنہی اصلیں ہندبی: آرکیالوجی  ئے میوزیم ءَ اندرا، چرخہ او  برونزئے تفرءَ پہناذا“

ما مروشاں سوشل ڈیموکریٹانی پروپیگنڈہ او ایجی ٹیشن لٹریچر ہ اندرا ہمے پیراگرافہ زیات نہ غندوں۔ او اغر گندونی تو اے ہمنگیں ڈولے آ کوٹ کثی ءَ بی چوکہ کسے مذہبی بُھت اے  اگھا سجدہا کنت۔ یعنی اینگلزا پہ رسمی عزت ڈسے جی، او ہماں انقلابئے بَر او ڈونگھائی کچغئے ہچ کوشیش مہ وی کہ ہمے ”سجہ ایں سٹیٹ مشینری“آ رکیالوجی ئے میوزیما“دیم دیغئے خیالہ پیش کنت۔ ما اے ٹوکہ پوہ بیغہ دِہ نہ غندوں آنہی ءَ کہ اینگلز سٹیٹ مشینری گشی۔

Check Also

بلوچی زبان ئے دیوان ۔۔۔ گام گثیر

بلوچی زبانئے  دیوان کمال خان شیرانی،ڈاکٹر خدائیداد اور عبداللہ جان جمالدینی پراگریسو رائٹر ز کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *