Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » قید تنہائی ۔۔۔ ثروت زہرا

قید تنہائی ۔۔۔ ثروت زہرا

میں اک ساعت نم گزیدہ  کی کھونٹی پہ ٹانگی گئی ہوں

خرابے کی صورت مرے آنکھ  کے

منعکس آئینوں میں گھری

یک بہ یک بے تکاں رقص کرنے لگی ہے

سوالی کتابیں، جوابی نگا ہیں

مرے کتب خانے کے چپ کے دہانوں

میں پاٹی گئی ہیں

مرے ہم سبق. نطق  تو بول دے                               کہ خموشی کی کثرت سے وحدت خفا ہے.                  ابھی کل تلک صحبت  عمرنے میری تعبیر کے چار وں کونے بھگوئے ہوئے تھے.                                       مگر   آج  تو یوگ سے سارا  سوکھا پڑا ہے                  نحوست کی باندی،صعوبت کی گٹھڑی اٹھائے مرے وقت کی پشت کو دہرا کرنے لگی ہے

میں باسی بھبھکتی ہوئی  شام کے خونی زہر اب  سے جام دل کتنے دن تک بھروں  گی                                میں  اس قید تنہائی میں اور کتناجیوں گی                        ۔۔۔

Check Also

کورا کاغذ! ۔۔۔  امداد حسینی

(“آصف فرخی“ کے لیے)   وہ جو کورا کاغذ میز پر پڑا ہوا ہے اس ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *