Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » پوھوزانت » ہژدمی برومیئر ۔۔۔ کارکس مارکس

ہژدمی برومیئر ۔۔۔ کارکس مارکس

۔آگِرداں 1851آ چھڑو کہنیں فرنچ انقلاب ئے جن و بلا چّرغئے ثنت، زڑدیں گلوز(gloves)۔(1848)والایانی رپبلکن، مارسٹا(کہ وثارکہنیں انقلابئے یک ہیرو بیلّی ئے  ویس داثئی) گرداں ہماں مہم پسند ا، کہ۔ وثی جھل کپتغیں‘ سردڑد دیو خیں دروشماں نپولین ئے آسنیں کُشوخیں ماسک ئے شیرا لکّینی۔ یک سجہ ایں راجے کہ گنڑ ثغثی کہ یک انقلابے آ گوں وثی دیم ءَ و دھغ ئے قوت تیزکثئی، ناغماں گندی کہ آں تہ گڑتو مُڑتغیں زمانہ اے اندرا شتوکپتہ۔ وثی ہمے حالتہ بدل بیغہ چکا امیدئے ہچ گنجائشہ نہ غندی،تو کہنیں ہسٹری او ہسٹورین دوار کڑو کنغ بنت،کہنیں کرانا لوجی،کہنیں نام،کہنیں حکم ………… کہ آں باز زمانغاں ژہ کہنیں دَمبانی عالمانی علمیت ئے سر حال بیثغ اثنت،او قانون ئے کہنیں چھاپہ خانہ ئے کستریں آسنیں حرف بیثو شتغثنت،کہ آں باز و ختاژہ سڑثو گلثغ اثنت۔ہمے  راج وثار بیڈلام(1)ئے ہماں گنوخیں انگریز ءَ ڈولہ گندی آں کہ گنڑیں کہ آں قدیمیں فرعونانی زمانہا زیند ھا کنغیں اوہر روش ہماں سختیں کارءَ سرا موتک و واویلا آ کنت کہ آنہیا  ایتھوپیائے تنگو ءَ کانڑ ءَ اندر ا لازمی کنغی ایں۔ ہمے شیر زمین ئے زیل خانہ ءَ اندرا بند بیثی آ، آنہی سغرءَ چکا یک تہار شو نغی بلوخیں ڈی او اے چکثی آ بستی اَیں،مُسُکّایک دراژیں کوڑائے زڑتیا غلامانی اوور سیئر اوشتاثی اَیں، او درءَ درکفغہ دروازغانی چکا بہوشیں بھاڑو ئی قاتلانی کنفیوزیں مچی اے اوشتاثغیں کہ نہ معدن ئے کانڑانی اندرا سزایافتہ آنی ٹوکہ پوہ بی،نہ یک دوہمی ٹوکہ پوہ بی،پچے کہ آں یک شریخیں بولی اے لافہ ٹوکہ نہ خننت۔ گنوخیں انگریز ساڑتیں ساہی اے کشی او گشی”مناں ژہ ہمے کل کارئے امید کنغہ بی،کہ کہنیں فرعونا پہ تنگواں کشّاں“۔ فرانسیسی قوم ساڑتیں ساہی ءَ کشی گشی”تاکہ بونا پارٹ خاندان ءِ پوراں ایرگیثروں“۔ انگریز داں وختیکہ سُدہا اث وثی دلا ژہ تنگوٹا ھینغ ءِ ارادہ کشتہ نہ خُثی۔ فرانسیسی داں وختیکہ انقلابا مانا تکی ایثنت،نپولین ئے گیر ا ژہ جاں چوڑائینتہ نہ خث اِش،چوکہ دَہ دسمبر ئے الیکشنا(2) ثابت کثہ۔ آں انقلاب ئے خطر ہاں ژہ ہمکر ہژ مبثغ انت کہ مصر ئے گوژ داپریں ہیراں گیر آرتغنت اش(3)‘ دو دسمبر1851 آنہی پسہ اث۔ آنہاں وثی کہنیں نپولین ئے چھڑویک کارٹونے نہ رستہ بلکہ نپولین ءَ جند ملث اَیش، کارٹونے دروشماہماں نپولین ملثہ چو کہ نوزدمی صدی لافاآنہیا  بیّغی اث۔

نوزدمی صدی ئے سماجی انقلاب وثی شاعری آ گوئستغیں زمانہا ژہ ٹاھینتہ نہ خنت‘بلکہ چھڑو ژہ فیوچرا ٹاھنیتہ کنتی۔ اے دانکو کہ گوئستغیں زمانہ ءَ بارہا وثی سجہ ایں باطل ایں عقیدہ آں پٹی مہ کشّی داں وختا وثی کار ءَ شروع دہِ کثہ نہ خنت۔ پیشی انقلاباں وثی باطن ئے بارہا وثار پرامغا پہ گوئستغیں زمانہ ئے جہانی ہسٹری ئے واقعہ آنی تازہ کنغہ ضرورت اث۔ وثی جندہ با طن ءَ پجغاپہ نوزدمی صدی ءِ انقلابا لازمی وثی مُڑ دغانی پورغئے ضرورت ایں۔ اوذا بیان باطنا ژہ دیما شتغ اث، ایذا باطن بیانہ چکا زواریں۔

فروری انقلاب یک حیران کنوخیں حملہ اے اث،کہنیں سماج ہشک و حیراں بیثہ۔ مخلوقا گوئشتہ کہ ہمے ناغمانیں دھک یک جہانی اہمیتے داری او اے یک نوخیں دور ے آرغہ نغارہ اے۔ دو دسمبر ا چالاکیں چالباز ا یک دوہمی چالے چلثہ او فروری انقلاب اوڈ ہر کثہ۔ اوہماں چیز کہ چپی کنے جیثہ آں بادشاہت نہ ایں بلکہ ہماں لبرل ایں رعایت اَنت کہ ژہ بادشاہتا قرنانی جہد ا رند پُلے جیثغ اثنت۔ بایدتہ ہمنگایث کہ سماجا وثار پہ نوخیں صفتے کٹثیں،سما اے کپتہ کہ ریاست پذگڑ تؤ وثی کلاں ژہ قدیمیں صورتا آتکہ،ہماں بے شرمیں حد ا کہ اودا چھڑو زہم و صلیبہ زور چلّی۔ ہمے فروری1848ئے  (ناغمانیں دھک)ئے ولدی آ، دسمبر1851ءَ ”کودتا“ آتکہ۔ مالِ مفت دلِ بے رحم۔ پر، ہمے دوئیں واقعہ آنی نیامئے وخت بے فائدہ آنہ شتہ۔ 1848آ گر داں 1851ءِ نیا ما فرنچ سماج یک خلاصہ اے ءَ گوں کہ انقلابی خلاصہ اے اث، ہماں کُل یاد کثہ، ہماں تجربہ زُڑتہ آنہانی کہ فروری انقلابا ژہ مقدم بیغ ضروری اث تاکہ اغر معاملہاں سطحی لوڑ گوڑ پیدا کنغہ ہندا سنجیدہ ایں کار کنغی تو آنہاں راستیں دگ یا قائدہ ئے رفتار داثہ بیئے۔ نیں سماکفغیں کہ فرنچ سماج پذگڑ تہ او گڑ تو ہماں ہندا پجثہ شموذ کہ لڑثغث۔اونِیں اشیا اصلا مں و ثار پہ روانگی ئے انقلابی سندھو،حالت،سیادی،اوہماں شرط،پیدا کنغی انت کہ ہما نہانی اندراماڈرن ایں انقلاب ہالینی او سنجیدہ بیثہ بی۔

بورژوا انقلاب،ہژدمی صدی ئے انقلابانی ڈولا،اشتافی یک سو بے آ ژہ دوہمی سو بہ پلوا جھمب انت،آنہانی ڈرامائی اثریک وہمیاژہ گوآ براناں رونت‘ لگّی کہ مردم و چیز جلشکوخیں چیلُکاں جناناں رونت‘خوند و وشی روزینہ ای جذبہ اے بیث، بلے ہمے کلاّنی زیندھ گوئنڈ یں،آں اشتافی وثی بڑزیں چونباں سربنت او گڑہ کہ نشہ پرشی تو دیر خمار آ پد ہوش کیث کہ شوں طوفان و غوغائے زمانغ ءِ نتیجہ و فصل نزآرے بہ جنت۔ دو ہمی پلوا،پرولتاری انقلاب،نوزدمی انقلابانی ڈولا،دائم وث تنقیدی ءَ کن انت،دھک مں دھکی وثی رپتار ءَ ہٹکیننت گڑہ اغدّہ گڑدانت ہمو ذاکاینت آں کہ بظاہر پیلہ بثیغ اث تاکہ اغّدہ شموذاں روانہ بیثہ بنت، او بے دڑدی آ گوں وثی پیشی کوشیشانی کچرہ گیری او کوتاہی و نزوری آنی سرا ملنڈ ءَ کننت انت،او دژ من ئے پروش دیغ ءَ مانہ  کاینت۔ بزاں مقصد چھڑواکھریں کہ دژمن دوار زمینا ژہ نوخیں قوتا زیری و کڑو بی او پیشا ژہ زیات تکڑا بیث و آنہانی دیما بیے کوشتی۔آنہاں ہماں منزلے آ داں کہ پجغی‘ شمانہیا  پیش ہماں ناولدیں مرحلہ کہ کاینت،ہما نہانی مقابلہ آ کناناں دھک میں دھکی پذ کنزانت اور دھماں وختا ہمے عمل جاری بی داں کہ پذکنزغ ناممکن بی، او حالت وث گوانکاں جناناں مہ گوئشنت:

Hic Rhodus,phic salta!اے گزاے میدان(3)۔

 

ریفرنسز

بیڈلم۔ لندنئے گنوخانی مشہوریں ہسپتال۔

دسمبر1848 آ ووٹاں گوں لوئی بونا پارٹ فرانسیسی رپبلکہ صدر ٹھیثہ۔

مصرئے بوڑ گیرآغ۔ بائبلہ قصہاں آتکی ایں کہ بنی اسرائیل مصراژہ درکنغ بیثغنت تو مسافری عذاباں ژہ منتو بازیں بے حوصلہ ایں مڑدم پراتاں شروع بیثغنت او آنہاں اغدّہ قید ئے ہماں وخت گیر آتکغنت کہ بوڑ و نغن بے وزتیاداں سیر ہ رست۔

۔Hic Rhodus, hic salta;(ہمش ایں روڈس،نیں سٹ دِرکّا) ہمے مثال قدیمیں یونانہ قصہ گشوخ‘ ایسپ ئے قصہاں ژہ آتکہ۔ ہمیذا یک وث گلائے آ ہر وخت گوئشت کہ آنہیا  یک دھکے آ روڈسِ جزیرھہ چکا باز مزائیں درِ کے سٹثغ اث۔ آنہیا  کہ گشغ بیثہ کہ شاہذ ئے چے ضرورت ایں۔ ایشیں روڈس نیں دِرِکاسٹ۔ مطلب ایں، اے گزاے مید ان۔

 

Check Also

اُمید ۔۔۔ شان گل

لینن دوات کھاتا تھا بہر حال 8، 9دسمبر 1895 کی رات کو پولیس نے لینن ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *