Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ وصاف باسط

غزل ۔۔۔ وصاف باسط

تمام ختم ہوئے خوش گمانیوں کے ورق

سراب کھا گئے تیری نشانیوں کے ورق

 

زماں نہیں تھا وہاں پر مکاں کے آنسو تھے

جہاں سے چنتا رہا میں کہانیوں کے ورق

 

اک اور پھول گرا میرے دل کے بنجر میں

مگر بہے نہیں آنکھوں سے پانیوں کے ورق

 

بکھر گئے تو بکھرنے دو ایک اک کر کے

عمیق تھے ہی نہیں رائیگانیوں کے ورق

 

تمہارے  ہجر سے آئے تھے جو مرے حصے

جلا رہا ہوں انہیں بدگمانیوں کے ورق

 

Check Also

ٹیڑھی پسلی ۔۔۔  انجیل صحیفہ

مجھ کو چھونے کی چاہت میں کھوئے ہوئے اے زمینی خداؤ ادھر آؤ! میں کائناتوں ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *