Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » مجھے گمان ہی رہا ۔۔۔ گلناز کوثر

مجھے گمان ہی رہا ۔۔۔ گلناز کوثر

مجھے گمان ہی رہا

نئی سویر کے  بطن سے

پھوٹ کر بہے گی نور کی ندی

فضا میں تیرنے لگیں گی

چاہتوں کی تتلیاں

خزاں کا خول توڑ کر

بہار سر اٹھائے گی

مجھے گمان ہی رہا

ہرے بھرے جہان کا

اگرچہ میرے سامنے

سروں کی فصل کٹ رہی تھی

آسمان سرخ تھا

ہوا کی بند مٹھیوں میں

نفرتوں کے بیج تھے

میں واہموں کی ناؤ میں

عجیب سے بہاؤ میں

کسی نئے جہان کی تلاش میں مگن

مجھے خبر نہیں تھی

جھلملاتے پانیوں میں زہر تھا

مری طرح کچھ اور بھی تھے

گم کسی خیال میں

جب آگ بستیوں کو ڈھونڈنے چلی

تو گیت گا رہے تھے

رقص کر رہے تھے

نیند میں۔۔۔

Check Also

کھڑکی میں چاند ۔۔۔ فہمیدہ ریاض

میں جس کمرے میں رہتی ہوں اس کمرے میں اک کھڑکی ہے گر رات کو ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *