Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » نظم ۔۔۔ ثانی خان

نظم ۔۔۔ ثانی خان

حقیقت ہی تو کہتے ہو

کہ ہم غدار ٹھہرے ہیں

ہمارا خون گندہ ہے

ہماری سوچ پہ طاری ہے

صدیوں کی مقدس سے مقدس تر

غلاظت ہائے نا گفتہ

ہمیں تا عمر الجھائے رکھا ہے

دوغلے افکار و بے منطق نظریوں میں

نظریے جو ہیں متروکہ

سبھی افکار جو جھوٹے

مگر ہم نے زباں اپنی کبھی کھولی

نہ ہم سے قبل لوگوں نے ہمارے بولنے کا

کوئی ساماں رکھ دیا تھا

اب ہمارے بعد بھی یہ بے زبانی، سر خمیدہ، جی حضوری

آنے والوں کے لیے ورثے میں رکھی ہیں

میری دھرتی کے وارث

تم ہمیں غدار کہتے ہو

یہ غداری جو ہوتی

تو پہلے چیخ اٹھتی

مگر تم نے ہماری بے زبانی تک کو زیرِ پا رکھا ہے!!!۔

اپاہج قوم کے تم ہو محافظ

مگر تم نے

حفاظت کے معانی تک بدل ڈالے

تو ہم اسکی بھی زمہ داری لے لیں؟

بھلا یہ کیا کیا تم نے

ہماری قطرہ در قطرہ کمائی عمر کی بارود میں رکھ کے

ہمارے جسم کے پرزے اڑائے

اور ہم نے اف بھی نہ کی

نہ کسی نے اٹھ کے پوچھا

صحیح کہتے ہو

غداری ہماری ہے

ہم ہی نے سالہا مظلومیت کا سیاہ لبادہ اوڑھے رکھا

اور تمھارے سرخ رو ہونے کی منت مانتے آئے

یہ غداری نہیں تو اور کیا ہے

Check Also

اوست ۔۔(چاچا بزدار ئے ناما) ۔۔  تاج بلوچ

ہورو، اے دنیا مئیگ وتئی گیگانہ اِنت پرچا وتی ارسانی باوستا دگہ اندوہ و ڈکان ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *