Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » مجید امجد

مجید امجد

چاندنی میں سایہ ہائے کاخ و کْو میں گْھومیے

پھر کسی کو چاھنے کی آرزو میں گھومیے

 

شاید اِک بْھولی تمنا، مٹتے مٹتے جی اْٹھے

اور بھی اْس جلوہ زارِ رنگ و بو میں گْھومیے

 

رْوح کے دربستہ سناٹوں کو لے کر اپنے ساتھ

ھَمہماتی محفلوں کی ھاؤ ھْو میں گْھومیے

 

کیا خبر کس موڑ پر مہجْور یادیں آ ملیں

گْھومتی راہوں پہ گردِ آرزو میں گْھومیے

 

زندگی کی راحتیں ملتی نہیں، ملتی نہیں

زندگی کا زہر پی کر، جستجو میں گْھومیے

 

کنجِ دوراں کو نئے اِک زاویے سے دیکھیے

جن خلاؤں میں نرالے چاند گْھومیں، گْھومیے

Check Also

فرحین کے لیے! ۔۔۔ امداد حسینی

تیرے گھر پر چاندنی سے ایک سندھی نظم لکھ کر گھر کے در پر چھوڑ ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *