Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » روگ  ۔۔۔۔ گلناز کوثر

روگ  ۔۔۔۔ گلناز کوثر

کیسے ہنستے ہو

دکھتی سانسوں سے

زخمی ہونٹوں کی درزوں کو بھرتے

جیتے۔۔۔ مرتے۔۔۔

چلتے رہتے ہو بوجھل قدموں سے

اندھے، بے منزل، بے سمت سفر کو۔۔

کون تمہاری نیندیں، سپنے

رات کی کالی دیواروں میں

چْن دیتا ہے۔۔۔۔

دن کا کھوٹا سکہ پھینک کے کہتا ہے

اب مول بھرو یا سود چکاؤ۔۔۔۔۔

یہ بیکار تماشا دیکھتے دیکھتے

روح چٹخ جائے۔۔۔۔۔

تم کیسے بھر لیتے ہو

جلتی بجھتی آنکھیں

خوابوں سے۔۔۔۔۔  رنگوں، لفظوں سے

کچھ تصویریں بْنتے۔۔۔۔

نظمیں کہتے رہتے ہو۔۔۔

تم پھول کھلانے کی خاطر

کس آگ میں بہتے رہتے ہو۔۔

بس ایک ذرا سے روگ کی خاطر

کیا کچھ سہتے رہتے ہو۔۔۔۔۔

Check Also

ایک اور نظم! ۔۔۔ امداد حسینی

آ بھی جاؤ کہ آج اکیلا ہوں آگئی ہو تو بیٹھ بھی جاؤ اور پھر ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *