Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » قصہ » آف ۔۔۔ مہتاب جکھرانی

آف ۔۔۔ مہتاب جکھرانی

آں وثی خیالانی تہا گاراث۔ آنہی ماذن وثی ٹورا جُزانا رو غا ث۔ دراژ و پراھیں پٹ ئے سرا گرمی ئے سوبا ڈغار دیرا شہ یک آھری ئے ڈولا جلشکغایث۔ ناسو ہویں مڑدمے آ راہمے نظار ہئے ڈولا مان کھاخت پر اے یک سوہو،او چالاکیں مڑدے اث۔ اے کسانیا شہ ہمے اُلکہاں رُستہ۔ اُلکہہ  ئے دُراھیں بنو او کھؤ راں شہ جُوانیا سر پھذاث، پوانکہ ایشیا راہچ تُھڑس و فکر نیست اث۔

روش گرمیا شہ تو سغا اث۔ گرمی سوبا شہ تُھنا ایشی گُٹھ ھُشک کثغ  اث۔ ایشی می سیں تغیں پھاغ دہ ھُشک بیثغ اث۔ ہمے سوبا نیں اے تنگ بیا نا روغ اث۔ ایشیا وثی کھلی کشتہ۔ کھلی لافا دِہ یہ آفی گُڑمبے اث۔ آنہیا ہماں آف تھنگثو گُٹھ ساڑت کثہ۔

آنہیا دیرا شہ کھؤرئے ھُشکیں کہیر دیثغ انت۔ آنہیا وثی ماذن اے خیالا تھا شینتہ کہ نواں کھؤرا راکہنیں آفے بیث تاکہ کھلی آ پُھر کھنت۔ وث واڑت او وثی ماذنا را ورائینی۔

ماذنا تھا شیناناں اے مڑ کھؤرا سر بیثہ دیثئی کہ کھؤر ہشک ایں۔ کھؤرئے لافا لانڑیں ئے یک ہشکیں جامبنھڑے آرا گواث اینگر آنگر کھنغ اث۔ آنہیا ہمے دیثو اے خیال کثہ کہ ”قدرت مرشی مناں گوں دہ ہمے کارا کھنغ ایں۔ من دِہ بازیں مڑدماں راپھرا مِثو پُھلثغ اث۔ چھے مرشی قدرت مناں دہ پھرا مغاتہ نئیں۔مرشی مئیں آخری روش اِیں چہ؟۔“

                 اے مڑہمے خیالانی لافا کھؤرا شہ گوستہ اعذے وثی اولا کھ تھاشینتئی۔۔ دیر آنہیا دونہوئے دیثہ۔ نیں آنہیا را اے وروخیں پٹ ئے تہازیندغی ئے یہ نشانے پدر بیثہ۔ اے مڑدا دونہو پلوا وثی اولاکھ رہ داثہ۔

 نز یخا شثہ دیثئی کہ گِذان ئے۔ یک نکھوئے چھیئے گراذغا پہ آس بال ایث، گواث آس تو سیث۔ گذانا یک کسانیں جنک اے دہ اسست اث۔ آں وثی نوخ گُپتھغ ئیں مینڈھئی گندغ اث۔ گوشے کہ باز خوش اث۔ گذانئے سائے سرا سئے دارانی سرایک مشکے دہ لڑکغ اث۔ اے دیثوزوار خوش بیثہ۔ نیں آف دہ واڑنتھ او آنہیا راہمے گذانا را پُلغا شہ کس داشت نہ کھنت۔

                اے مڑد گذانئے نزیخا شثہ او گوانکھ جثئی ”اووو۔۔۔ نکھو! دگ رووخے آں۔۔ جھولو آ جثغ آں آفے استیں نہ۔۔؟“

 نکھوآ ”ھاابا“ کثہ او قدحے زُڑ تھو مشک بلوا آف پُھر کنغا شُتہ۔ اے مڑدا گِذانا رانغاہ چھرینتہ۔ دیز، تافغ او دوہمی ورغ چھرغئے ھیران اث انت۔ اے مڑدا خیال کثہ کہ ”برغ او پھلغ آ پر ھچی نیست ایں آف وراں گُڈ وثی رہ گراں۔“

 نکھو آ آف آڑتھہ۔ آفئے قدح کہ آنہیا دیثہ آنہیا راباز ونٹر ثہ۔ ایشی ئے دل باز خوش بیثہ کہ پُلغا پہ آنہیا راچھی یے دست کپتہ۔ وثی کھلی نکھو آ راپھر کنغا پہ داثہ۔ نکھوآ کھلی پھر کثو آڑتھہ۔ آنہیا گوشتہ۔ ”نکھو! یہ قدحے اغد آفئے بیار“۔

                 اے مڑدا قدغ زُڑتھو ماذنا را پھاذئے اشارہا ماں رائی کثہ۔ نکھوآ دیثہ کہ اے مڑدئے نیت قدح برغ ایں۔ نکھو آ گوشتہ۔

                 ”اے زوار۔۔۔! مرشی تھؤ قدحا برغایئے بانگوا ماذن والو آں را آف کس نہ داث۔“

                 آنہیا ہمے سو چثو ماذن تیز کثہ کہ بانگوہ کھئے  آدیثہ پر اے زانغا نہ اث کہ آں ماذن سوارانی روزا بندکثی آ روغا اث۔

Check Also

ماہیکان! ۔۔۔۔ عابدہ رحمان

آسمان پر غروبِ آفتاب کی زردی نے ایک عجیب اداسی پھیلا دی تھی۔ سمند ر ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *