Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » نثری نظم “سفر” ۔۔۔۔ اسامہ امیر

نثری نظم “سفر” ۔۔۔۔ اسامہ امیر

تم وینس کی وہ حسین عمارت ہو
جہاں جانے کے لئے
ایک کشتی بنائی
اور اپنے دل سے
تمہارے دل تک کا سفر باندھا
جہاں شاعری جنم لے رہی تھی

میرے ہاتھ بادبان بن گئے
اور میرے پیر
چپو

مجھے پانیوں پر چلنا چاہیے تھا
لیکن میں نے سہولت سے کام لیا
کہ اپنے پسندیدہ شاعر کی نظموں سے ملاقات کو
مشکل راستہ
اختیار کرنا
نظم کہنے جیسا ہے

Check Also

گزری اور آنے والی بہاروں کے نام ۔۔۔ نوشین کمبرانڑیں

ہزاروں گنج ہیں جن پر تیرے پیروں کے بوسے ہیں تہہِ خاکِ وطن تو ہے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *