Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » فہمیدہ ریاض

فہمیدہ ریاض

کوتوال بیٹھا ہے
کیا بیان دیں اس کو
جان جیسے تڑپی ہے
کچھ عیاں نہ ہو پائے
وہ گذر گئی دل پر جو بیاں نہ ہو پائے
ہاں لکھو کہ سب سچ ہے ، سب درست الزامات
اپنا جرم ثابت ہے
جو کیا بہت کم تھا صرف یہ ندامت ہے
کاش وقت لوٹ آئے ، حق ادا ہوا ہے کب
یہ کرو اضافہ اب ، جب تلک ہے دم میں دم
پھر وہی کریں گے ہم ، ہو سکا تو کچھ بڑھ کر
پھر وہ گیت چھیڑیں گے
تیرہ زاد ہر آمر ، کانپ اٹھے جسے پڑھ کر
پھر وہ حرف لکھیں گے
بستہ دست ہر مظلوم ، جھوم اٹھے جسے گا کر
چیتھڑا ہے یہ قانون
باغیوں کے قدموں کی ، اس سے دھول جھاڑیں گے
آمری نحوست ہے یہ نظامِ احکامات
بیچ چوک پھاڑیں گے
وقت آنے والا ہے ہر حساب ہم لیں گے
جب حساب ہم لیں گے ، پھر جواب دینے کو تم مگر کہاں ہو گے
خار و خس سے کم تر ہو ، راستے کے کنکر ہو
جس نے راہ گھیری ہے ، وہ تمہاراآقا ہے
ہم نے دل میں ٹھانی ہے ، راہ صاف کر دیں گے
تم کہ صرف نوکر ہو ، تم کو معاف کر دیں گے

Check Also

The Axiom Of Soil— Nosheen Qambrani

یہ بہشت ِ اجل محوِ خوابِ رواں عمر کی پیاس کا تاس (1) تھامے ہوئے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *