Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ نوشین قمبرانی

غزل ۔۔۔ نوشین قمبرانی

ہجرِمْدام، بحرِہمیشہ سے پْھوٹ کر
اِس دشتِ نامراد سے لپٹا ہے ٹْوٹ کر

جانے اْداسیوں کو سمیٹے کدھر گئی
بادِشمال، غم کے پرِستاں کو لْوٹ کر

میں لاوْجودیت میں گِری ہوں بطورِ حرف
اپنے کوی کے مہرباں ہاتھوں سے چْھوٹ کر

اے تا ابد غریقِ سفر روشنی کی رَو
ہم بیکَساں سے عہدِوفا جْھوٹ مْوٹ کر

رستے میں اک صدا مِلی، آہنگِ صد زماں
چْپ ہو گئی جو رْوٹھنے پہ میرے رْوٹھ کر

Check Also

سریاب روڈ پر ایک خزاں کی شام ۔۔۔ رضوان فاخر

میری رگ رگ میں اتر آئی ہے انجیکٹڈ شام کانپتا جاتا ہوں سگریٹ کے کش ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *