Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » سعدیہ بشیر

سعدیہ بشیر

آئینہ دل 

میرے دل کے اک خانے میں
غم پیر پسارے بیٹھے ہیں
تم بھی تو اک غم ہی ہو ناں
اک خانے میں دلدل ہے
اس میں جکڑی ہیں کچھ یادیں
آنسو ،آہیں اور تصویریں
باتیں ،شکووں کی زنجیریں
لاکھ رہائی دینا چاہوں
اور بھی جکڑی جاتی ہیں
پہروں مجھے رلاتی ہیں
اک خانہ خواہش کا ہے
جس میں کتنی ہی قبریں
کتبوں سے محروم سہی
منظر کچھ دل گیر سا ہے
حسرت ہے اور درد اگے ہیں
جانے کیسے لاشے ہیں یہ
جانے کن کی موت ہوئی ہے
کیا یہ اتنی ارزاں تھیں ؟
خون ابھی تک رستا ہے
اک خانے کے در پہ دیکھو
لاتعداد سوالی ہیں
شاید یہ دنیا کا ہو گا
کرلاتا سناٹا باہر
اندر جامد خاموشی ہے
باہر اک ہجوم سہی
پر اندر سے یہ خالی ہے

Check Also

فہمیدہ ریاض

کوتوال بیٹھا ہے کیا بیان دیں اس کو جان جیسے تڑپی ہے کچھ عیاں نہ ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *