Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » یاد آتی ہے ۔۔۔ کاوش عباسی

یاد آتی ہے ۔۔۔ کاوش عباسی

اپنی
اپنے ماں باپ کی
اپنے بھائی بہن کی
اپنے وطن کی
غْربت یاد آتی ہے

سکول کے پیارے لڑکے لڑکیاں
اتنے معصوم ، اِتنے جِیوَت ، اتنے تیز
اْنکے اْنکی اْستاد اْن کے ساتھ
شہر کے پارک میں
جِسمانی مشقیں کرتے ہیں
شہر کی
صاف اَور سر سبز اَور سجِیلی
سڑکوں یعنی سائیڈ واکس پر
(واپس سکول کی جانِب شاید)
بھاگتے جاتے ہیں
اْنہیں دیکھتے دیکھتے
مْجھ کو اپنی
اَور اِک اْجڑے نْچڑے
بہت بڑے دِیہات کے جیسے
اپنے وطن کی
برسوں برس کی
صدیوں صدی کی
لْوٹ مار
اَور
مْفلسی اَور بے حالی
یاد آتی ہے
اپنی کمتری یاد آتی ہے۔

Check Also

چوتھا دن ۔۔۔ قندیل بدر

ابھی کچھ کام باقی ہے ابھی سورج پہ پہلا پاؤں رکھنا ہے فلک کا ریشمی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *