Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ عظیم انجم ہانبھی

غزل ۔۔۔ عظیم انجم ہانبھی

مذاق اپنا اْڑا رہا تھا
مرے مقابل وہ آرہا تھا
مجھے محبت نہ راس آئی
وہ مجھ کو نفرت سکھا رہا تھا
مرے عدو رو پڑے تھے جس دم
میں اپنی بپتا سنا رہا تھا
’’کچھ اور بھی ہوگیا نمایاں‘‘
وہ خود کو مجھ سے چھپا رہا تھا
وہ بن کے سورج ہْوا تھا مہماں
میں موم گھر کو سجا رہا تھا
ترس رہا ہوں ہَوا کو اب میں
کبھی میں موجِ صبا رہا تھا
وہ دل میں ایسے رہا ہے انجم ؔ
کہ جیسے دل میں خدا رہا تھا

Check Also

ایک آواز ہے ۔۔۔ گلناز کوثر

کیا کہوں۔۔۔ایک آواز ہے بھیگے پتوں پہ بارش کی بوندیں بجاتی۔۔۔ بہت کھنکھناتی ہوئی۔۔۔ ایک ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *