Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » بلوچستان  ۔۔۔ سلیم شہزادکوئٹہ

بلوچستان  ۔۔۔ سلیم شہزادکوئٹہ

تناؤ روز بڑھتا جارہا ہے
سویرا دیکھے بھی اب تو کئی دن ہوگئے ہیں
کئی کردار میرے کھو گئے ہیں

کوئی مدت عجب سے حال میں اُلجھے ہوئے ہیں
ستارا ، فال میں اُلجھے ہوئے ہیں

کسی دیوارِ گریہ سے لگے بیٹھے ہوئے ہیں
اور اکثر سوچتے ہیں

یہ میرا بویا کب تھا جس کو اب میں کاٹتا ہوں
کہا ۔سیراب رکھوں گا تجھے میں
مگر میں بانجھ ہوتا جارہاہوں
کہ اب تو دھوپ بھی جُھلسارہی ہے

سہولت سے مجھے وہ مات دیتا جارہا ہے
ذبردستی مری آنکھوں میں’’اپنے‘‘
خواب بھرتا جارہا ہوں

دھواں ہے اسقدر زیادہ
میری پہچان مشکل ہوتی جاتی ہے

مسلسل ہی نظر انداز کرتا جارہا ہے
مجھے اُس نے ’’بلوچستان ‘‘ سمجھا ہے

Check Also

نثری نظم ۔۔۔ نور محمد شیخ

خود کو خوش اَسلُوبی کے ساتھ زندہ رکھو جینا بہت اہم جیے جاؤ حصولِ منزل ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *