Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » موت ہے کتنی شریر: دانیال طریر ۔۔۔ حفیظ تبسم

موت ہے کتنی شریر: دانیال طریر ۔۔۔ حفیظ تبسم

دانیال طریر!۔
تمھاری یادیں گنتے گنتے
ہم سڑک کے بے نشان مین ہول کا حصہ بن چکے ہیں
آگے _یا_ پیچھے کوئی نہیں
جو ہاتھ تھامے قیام گاہ کا راستہ دکھائے
اور تم بے فکری سے ٹہلتے ہو
آسمان کی چھت پر

تم خدا کو نظم سنا ناچاہتے ہو
جو پرانے شہر کی بلند سیڑھیوں پر لکھی
ارے دانی!
خدا کے پاس نظم سننے کے لیے وقت نہیں
وہ کائنات کے گورکھ دھندے میں مصروف ہے

تم ہمارے بغیر اکیلے ہو
قدم قدم پر تنہائی ہے
سنو!
اور لوٹ آؤ
زمین تمھاری نظم سننے کے لیے بے قرار ہے

Check Also

فہمیدہ ریاض

کوتوال بیٹھا ہے کیا بیان دیں اس کو جان جیسے تڑپی ہے کچھ عیاں نہ ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *