Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » پبلونرودا کی آخری نظم ۔۔۔ پبلونرودا/انور احسن صدیقی

پبلونرودا کی آخری نظم ۔۔۔ پبلونرودا/انور احسن صدیقی

ستمبر سن تہتر کے اذیت ناک دن
تاریخ کے سارے درندوں نے
ہمارے پرچمِ زریں کو بڑھ کر نوچ ڈالا ہے
درندو ، ستم نے کتنا خوں بہایا ہے
تمہارے جسم جاگیروں پہ پل کر
فربہی سے کس قدر بھر پور ہیں
تم وہ لٹیرے ہو
جگہ ہے جن کی شیطانی جہنم میں
بکاؤ مال کی مانند تم کو
بارہا بیچا خریدا جا چکا بازارِ عالم میں
تمہیں
نیو یارک کے خونخوار عفریتوں نے
کارِ مرگ سونپا ہے
اذیت کی مشیں کے لالچی پرزو
ڈبو کر اپنے مقتولوں کے خوں دل میں
امریکہ کی روٹی کھانے والے روسیاہ ، بے آبرو سوداگرو
بے رحم قصّابو
تم ایک غولِ بیا بانی ہو ،
ظالم ، بے اصول و پُر ہوس افراد کی ٹولی
کہ جس کی زندگی کا مقصد و منشا
نہیں اس کے سوا کوئی
کہ مجبور و پریشاں خلق کے کرب و اذیت
بھوک اور افلاس میں
پیہم اضافہ ہو !

Check Also

چوتھا دن ۔۔۔ قندیل بدر

ابھی کچھ کام باقی ہے ابھی سورج پہ پہلا پاؤں رکھنا ہے فلک کا ریشمی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *