Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » ھمبوئیں سلام » اُسامہ امیر، جاوید زہیر

اُسامہ امیر، جاوید زہیر

“ایڈیٹر کے نام خط”
“سنگت” کا اکتوبر ایڈیشن ان دنوں مرے ساتھ ساتھ ہے ،میں نے اس شمارے کے تمام شعراء کا کلام بہ غور پڑھا، سرشار ہوا اور مجبور بھی کہ اس بارے اپنے تاثرات پیش کروں…
“گر قبول اقتدز ہے عزو شرف”
شاعری کون کون سے مراحل طے کرتے ہوئے کہاں آن ٹھہرتی ہے اس سے ایک سنجیدہ قاری بہ خوبی آگاہ ہے، مذکورہ سنگت پڑھتے ہوئے مجھے از حد مسرت ہوئی کہ ایک بڑی تعدار میں نوجوان شعراء کا کلام اس شمارے میں پڑھنے کو ملا جس میں غزلیں، نظمیں، عشرے سبھی اصناف شعری کا بہترین انتخاب پیش کیا گیا ہے جس کے لیے مدیر خاص مبارک باد کے مستحق ہیں.
خمار میرزادہ کی نظم “پیاس” سے ماحول بناتے ہوئے آگے کی طرف آیا تو تمثیل حفصہ کی نظم “فرعون زندہ ہیں”نے جکڑ لیا. تمثیل حفصہ کا ڈکشن ان کے معاصرین سے بالکل جدا معلوم پڑتا ہے خیر اس پر مفصل بات پھر کبھی کی جائے گی.. عقیل ملک صاحب کی تینوں غزلیں بہت پسند آئیں. ان کی مرصع کاری آپ اپنی مثال ہے ، نعیم رضا بھٹی کی غزل بر زمینِ میر کا رچاؤ قابلِ تعریف ہے اس کا یہ شعر بہت پسند آیا.
“کورا ہونے سے پیشتر صاحب
ایک اک رنگ اختیار کیا”
قندیل بدر کی غزل بہت ستھرے سبھاؤ کے ساتھ قاری کو سوچنے پر مجبور کرنے والی محسوس ہوئی
“آج تو دعا بن جا مجھ کو مانگ لے رب سے
آئینے کو جانے کیوں اچھی لگ رہی ہوں میں”
اس شعر کا متن اس قدر نیا ہے کہ اس سے پہلے ایسا اظہار نظر سے نہیں گزرا۔
میں آپ سے اجازت چاہتے ہوئے اپنے تاثرات سمیٹتے ہوئے یہ عرض کرنا چاہتا ہوں کہ یوں تو تمام ہی کلام.،محظوظ کرنے سے تعلق رکھتا ہے، ان کے علاوہ احمد وقاص، بلقیس خان، وہاب شوہاز کی غزلیں ثبینہ رفعت کی مختصر نثری نظمیں، آمنہ ابڑو کی نظم سبھی پسند آئیں جب کہ انجیل صحیفہ کا منظوم ترجمہ ان کی شعریت کا ایک اور پڑاؤ ثابت ہوا یہ ترجمہ اس قدر باعثِ مسرت ہے کہ مجھ جیسے قاری کو دوسری دنیاؤں سے روشناس کرانے کا پل بنا..
سلامت رہیں
آپ کا
اسامہ امیر

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

واجہ ڈاکٹر شاہ محمد مری
ایڈیٹر ماہتاک سنگت کوئٹہ
گوں ھمبل او ہمکاراں سلامت باتے۔
اگست ماہئے ’’ سنگت‘‘ منی دو شئر چاپ بیتا ، یک شئری ئے گُڈی دو بند کم کنگ بیتہ کہ اِشانی تھا شائر ئے نا م ہم نبشتہ ایں۔ شیئر ئے براہ داری ھمے دوئیں بند اَنت۔ نزاناں چی آ ؟ بلے نی چومہ بیت ۔ ھمے یکیں ’’ سنگت‘‘ ایں کہ پر مارا منتگ آدگہ دُرستاں مارا یلدات۔
اے رندا من دِگہ یک شیئر ئے راہی کنگاں ’’ ندات ے ئے بھر منی شت ئے زند ا ‘‘
اِشیا ’’ سنگت ئے‘‘ براہ داریں تا کانی تھا جاہ بدے۔
منت واراں۔
جاوید زہیر ۔ پیشکان

Check Also

محمد رفیق مغیری

محترم جناب ڈاکٹر شاہ محمد مری صاحب اقبال بلند!۔ آپ پر سلامتی ہو!۔ سنگت ہر ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *