Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل  ۔۔۔ قاضی دانش صدیقی

غزل  ۔۔۔ قاضی دانش صدیقی

ذکر کرنے سے گریزاں خوش بیانی رہ گئی
ِدیکھ اے جوشِ خطابت بے زبانی رہ گئی

وقت یہ تمہید سارا باندھنے میں کٹ گیا
درج تھی جو لوحِ دل پر وہ کہانی رہ گئی

ناپ آیا ہوں سمندر صحرا جنگل وادیاں
حدّ پیمائش زمیں تا آسمانی رہ گئی

عشق دامن سے جھٹکتے ہی وفا نے راہ لی
بیچ ہم دونوں کے بس یہ سر گرانی رہ گئی

چاک پر اترا نہیں وہ اب تلک چہرہ خیال
سوچ میں کچھ کوزہ گر کے بد گمانی رہ گئی

ایک مدہوشی ذہن پر عمر بھر حاوی رہی
ہوش تیری دسترس میں رائگانی رہ گئی

زندگی میں رنج کا ہے وہ حوالہ مستند
حکمِ قاضی سے خطا جو بخشوانی رہ گئی

Check Also

فہمیدہ ریاض

کوتوال بیٹھا ہے کیا بیان دیں اس کو جان جیسے تڑپی ہے کچھ عیاں نہ ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *