Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » ثبینہ رفعت

ثبینہ رفعت

کیمو فلاج
جب کر نیں رات کے آنچل میں
موتی ٹانکنے بیٹھیں گی
جب نیند کی پریاں
رنگوں کے سب عکس لئے لہرائیں گی
جب پروابہت سبک ہو کر
کہیں دور کے راگ سنائے گی
جب خاموشی کی چادر میں
حرف بھی
تھک کر سوجائیں گے
تب اپنی
روح کی آنکھوں سے
تم آپ گواہی لے لینا
کہ
بھیس بدل کر کائنات
میرا سراپالے لے گی

لاعلاج
سمندر نے
لہروں سے کہا
اتنے سارے زخموں کو دھونے کے لئے
پانی کہاں سے آئے گا؟

سبقت
اتنی ساری بھیڑ میں
ہاتھ چھوٹ جاتے ہیں
بے پناہ جب چاہیں تو
روگ روٹھ جاتے ہیں
دل کی باتیں بھول جا
وہ شہر دل میں کیوں رہے
شہر جو ویران ہے
اجنبی شہر نے جو
آنکھوں کو سوغات دی
وہ
ماتھے پر جھومر سہی
ساری باتیں بھول جا
خشک سالی ہے بہت
دھرتی کو برسات دے!!۔

دل کا ریشم
اب کے
تیرے کرم کی بارش
دھرتی پہ نہبرسی تو
دھرتی کا سچ بڑھ جائے گا
لیکن ایک بار تو
اس کی آنکھیں دیکھنا
سچی آنکھیں
ہیروں جیسی ہوتی ہے

موجودگی
رات میرے آنچل میں
اتر کے آسمان سے
کتنے ستارے آگئے
مجھ کویہ خبر ملی
تم میرے شہر آئے تھے

وفادار
جانتے ہو
کونج کو،
ایک ساتھی
چنتی ہے
وہ بچھڑ جائے توپھر
زندگی
اس کے لئے
درد کاصحرابنے
اب مجھے مت روکنا
اب تو جینے کا کوئی
جواز بھی نہیں رہا

سکتہ
درد کے سیلاب میں
ماہی بے آب ہے
آسمان کی آنکھ میں
ایک بھی قطرہ نہیں
غم سوا ہو جائے تو
آنکھ کب برستی ہے!!۔

Check Also

یاخداوند قُدرتانی ۔۔۔ شوکت توکلی

یا حْداوند قْدرتانی کْل چاگِرد مالِکئے ھْشک تر و کوہ وکھلگر مزن کسانئے واژہے باطنَئے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *