Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل  ۔۔۔ احمد شہریار

غزل  ۔۔۔ احمد شہریار

تم سب سے زیادہ ہو، میں خود اپنی کمی ہوں
تم جتنے وجودی ہو، میں اتنا عدمی ہوں

دیوار ہوں میں دیدہ و نظارہ کے مابین
حیرت ہوں کبھی اور کبھی آنکھوں میں نمی ہوں

میں رعد کی ہیبت ہوں، میں بارش کی نفاست
نسلاً عربی اور مزاجاً عجمی ہوں

دیروز سے کہتی رہی اک ساعتِ فردا:
میں سانس ہوں اور وقت کے سینے میں تھمی ہوں

دوزخ کی صدا آئے: میں ہوں فقر سرائے
جنت یہ پکارے کہ میں دامی درمی ہوں

Check Also

بانجھ بنجھوٹی ۔۔۔ انجیل صحیفہ

میں نے  کثرت سے آنکھوں کی بینائی خوابوں پہ خرچی ہے سو آنکھ اب کوئی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *