Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » سِکھ  ۔۔۔ آمنہ ابڑو

سِکھ  ۔۔۔ آمنہ ابڑو

دوسہیلیاں میری۔۔۔
جن سے سیکھتی ہوں میں
ایک میری ماں ہیں
جو مجھے سکھاتی تھیں
شہرِ بے اماں میں تو
اس طرح ہی جیتے ہیں
گیت لکھتی،
کلیاں چنتی
انگلیاں لہو کرو
راہ تکتی
سپنے بنتی
آنکھ کو دھواں کرو
“میں بھی ہوں‘‘ کے جانفریب
زعم سے مکرجاؤ
مصلحت کی دلدل میں
تھوڑا تھوڑاجینے کی
عادتوں کو اپناؤ
دوجی میری بیٹی ہے
یہ مجھے بتاتی ہے
“میں بھی ہوں‘‘ کی آگہی
آج کی سچائی ہے
گیت لکھتی،سپنا بنتی،
آنکھ ہو کہ انگلیاں۔۔۔
وہ بھی سانس لیتی ہیں۔
آئیے، کہ ہم سب اب مصلحت
کی چوکھٹ پر
سانس سانس مرنے کی
عادتیں بدل ڈالیں
اب “جیؤاورجینے دو‘‘ کااصول اپنا کر،
شہرِ نا مہر کو بھی
مہرباں بناڈالیں
دوسہیلیاں میری۔۔۔
جو مجھے سکھاتی ہیں

Check Also

بانجھ بنجھوٹی ۔۔۔ انجیل صحیفہ

میں نے  کثرت سے آنکھوں کی بینائی خوابوں پہ خرچی ہے سو آنکھ اب کوئی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *