Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ کاوش عباسی

غزل ۔۔۔ کاوش عباسی

شکست خواب پر آخر تو مجھ کو رونا تھا
جو تھا نصیب میں آخر وہی تو ہونا تھا

یہ تیوروں میں مرے اک بگاڑ سا جو ہے
کبھی یہ سپنا کوئی سانولا سلونا تھا

خوشی تو کیا کوئی ملتی معاش میں پرآہ
وہ اک جو لذت غم تھی اُسے بھی کھونا تھا

گنوا کے غیرتِ خوں چند راحتوں کے لئے
میں اب یہ سوچ رہا ہوں کہ یہ نہ ہونا تھا

اک اشک آنکھ میں میری رکھا گیا کاوش
اُسی میں حال سب اپنا مجھے سمونا تھا

Check Also

شہناز شبیر 

اَدھورا پن (روز گل کے نام) چھوٹی سی اس دنیا میں اِ ک میں اور ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *