Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ شمع ملک

غزل ۔۔۔ شمع ملک

ہجر آسیب کہ اعصاب پہ چھایا ہوا ہے
یہ ترا عشق جسے سر پہ چڑھایا ہوا ہے

ایک وحشت ہے جو آنکھوں میں چھپائی ہوئی ہے
ایک آزار کہ سینے سے لگایا ہوا ہے

اب کوئی دوست کہے گاتو ہنسی آئے گی
اک تعلق نے مجھے اتنا رْلایا ہوا ہے

یہ جو آنکھوں میں نمی ہے ، مری لائی ہوئی ہے
میں نے صحرا کو یونہی جھیل بنایا ہوا ہے

ایک وعدہ جو نبھایا بھی نہیں جا سکتا
کس لیے پاؤں کی زنجیر بنایا ہوا ہے

یہ جو چہرے پہ مرے ہنستا ہوا چہرا ہے
میں نے اک دوست کے کہنے پہ لگایا ہوا ہے

Check Also

دیارِ چاکر  ۔۔۔۔ میر ساگر

دیار چاکر مرید ہوں میں مرید جس نے صداقتوں کے عَلَم اْٹھائے مرید جس نے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *