Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل  ۔۔۔ نیلم ملک

غزل  ۔۔۔ نیلم ملک

اندازِ تکلم ہے جْدا اس لئے سب سے
کہہ لیتا ہے تُو بات پرانی نئے ڈھب سے

اِس عِشق سے پہلے تو فقط عْمر گْزاری
جینے کا تو آغاز ہی میں نے کِیا اب سے

مانا ہے ترے ہجر کو جس دن سے مسیحا
مجھ وصل گزیدہ نے شفا پائی ہے تب سے

انفاس تلک درد کے قبضے میں ہیں ایسے
آزاد نہ ہو پائے ہے اِک آہ بھی لب سے

زِچ کرنے پہ مائل ہے مْجھے اْس کی کریمی
یہ لوگ ڈراتے ہی رہے جس کے غضب سے

وہ رب ہے سو وہ بخش بھی دیتا ہے خطائیں
یہ میں ہوں مرے سامنے رہئے گا ادب سے

دیکھا نہ کوئی وقت سا صیّاد جہاں میں
تیر اس کے غضب کے ہیں اور اہداف عجب سے

Check Also

گزری اور آنے والی بہاروں کے نام ۔۔۔ نوشین کمبرانڑیں

ہزاروں گنج ہیں جن پر تیرے پیروں کے بوسے ہیں تہہِ خاکِ وطن تو ہے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *