Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2020

Yearly Archives: 2020

سماجی امور میں آٹومیٹکی نہیں ہوتی

کورونا بحران سے دنیا نے حتمی طور پر نکل جانا ہے۔گوکہ اُس کی صفوں میں سے چار پانچ لاکھ لوگ کٹ چکے ہوں گے۔۔۔۔ ہم آپ نے ہارر (ڈراؤنی)فلمیں بہت دیکھی ہونگی۔ انفرادی طور پر دکھ اور بربادی سے بھی دوچار ہوئے ہوں گے۔ مگر آٹھ ارب انسانوں کے سامنے یہ ننگ دھڑنگ اور زندہ ”ہارر“ہماری زندگیوں میں پہلی بار ...

Read More »

کھڑکی میں چاند ۔۔۔ فہمیدہ ریاض

میں جس کمرے میں رہتی ہوں اس کمرے میں اک کھڑکی ہے گر رات کو میری آنکھ کھلے میں مڑ کر اس کو تکتی ہوں تب مجھے دکھائی پڑتا ہے کھڑکی میں چاند چمکتا ہے میں ہولے سے مسکاتی ہوں اور مجھ کو ایسا لگتا ہے ہو چاند بھی جیسے مسکایا پھر موند کے اپنی آنکھوں کو ہولے ہولے سوجاتی ...

Read More »

پندھ ۔۔۔ مہتاب جکھرانی

انسان ئے زند ئے پندھ ہڑ دو انت یکے کوڑی ئے کارانی دوہمی پندھ زندغی ئے تاں بیث آں سر؟ اے کئے آ زانتہ؟ بیثو بے سدھ زند ئے پندھا شہ من بیثغاں رائی کُوڑی ئے پندھا کھؤراں جھاگانا ریخاں گوئزانا پٹاں رُمبانا بیلواں دِرکھانا کوھاں کھئیلانا مئیزلاں گرانا رپتغاں من بستغیں شہرے آ شہر چھی یے اث؟ بہشت ئے ...

Read More »

ورلڈ و میٹر ۔۔۔   سلمیٰ جیلانی

روزانہ میں اس تازہ چارٹ کو دیکھتی ہوں فری ہینڈ پانے والے اس وائرس سے مزید کتنوں نے چوٹ کھائی کتنوں کو شہ مات ہوئی اور کتنے واپس صحت کو پا سکے ایسا لگتا ہے یہ کوئی اولمپک کھیلوں کے مقابلے ھیں ایک سو اٹھانوے ملکوں کے درمیان خوفناک اور وحشتناک موت کی دوڑ لگی ہے کل تک چین جو ...

Read More »

غزل ۔۔۔ مسرور پیرزادو

میں تو ماضی بعید ہوں سائیں!۔ اس لیے ہی جدید ہوں سائیں!۔   میرے من میں ہی میرا مرشد ہے اپنے من کا مْرید ہوں سائیں!۔   میں فقط خود میں ہی نہیں موجود میں تو خود سے مزید ہوں سائیں!۔   نا اْمیدی اْمید لگتی ہے اس قدر پْر امید ہوں سائیں!۔   میں ندی ہوں، ملوں گی ساگر ...

Read More »

دردئے چیریں پَھار ۔۔۔  زاھدہ رئیس راجیؔ

پچ نہ لرزایت دوبر، وابیں چَمّ ئے کُمار تلوس اِیت تاں ابد، چم دلانی ندار ماہ واستال ئے واھگ، ماں ھاکاں ھوار پروشتگ اَنت گوں پداں، اُمر ئے واب وودار موتک زُرتگ تیاب ئے دپ ئے بالوھاں چوں بہ کنت اِنت زِر ئے درد ئے چیریں پَھار دومی دنیا ئے ھالاں پدااِشکُن آں دیدگانی ھبر اِشکُتین ئے دووار نے کہ ...

Read More »

ڈاکٹر نجمہ شاہین کھوسہ

یہ جو عشق مسلک کے لوگ ہیں،انھیں رمز سارے سکھا پیا!۔ یہ مشعال عشق کی داستاں،  یہ انھیں حرف حرف سناپیا!۔   میرے چارہ گر،میں ہوں در بدر،میں تو تھک گئی،ہے عجب سفر یہ جو بے نشاں سی ہیں منزلیں،مجھے راستہ بھی دکھا پیا!۔   نہ حدود میں،نہ قیود میں،مرا دل ترے ہی وجود میں یہ سجود کا حسیں پیرھن  ...

Read More »

مادر گیتی ۔۔۔ انیس ہارون

یہ وہ ہے جو ازل سے دوڑ رہی ہے پتھریلی زمین پر،صحراؤں میں میدانوں اور کھیتوں میں یہ وہ ہے جس نے بچوں کو جنم دیا کچھ کھو دیے کچھ کو پال کر جوان کیا تاکہ نسل انسانی کو قائم رکھ سکے یہ وہ ہے جس نے دھرتی کا سینہ چیر کر اناج اْگایا تاکہ پیٹ کا ایندھن بھر سکے ...

Read More »

نظم ۔۔۔ سندھو پیرزادہ

اداس روح اور خزاں کی ہوائیں۔۔۔۔   تمہارے لیے مانگی گئی میری دعائیں کالے دھاگوں پر بندھی میری گرہیں نظر اتارنے کے سب انتر منتر اور آدھی رات کے بعد کی گئی میری عبادت ہواؤں پر حاوی ہوجاتی ہے نوراتری کی نو ہی راتیں دیوں میں التجائیں جلتی رہتی ہیں خزاں کے موسم میں زرد انتظار اور درگاماں کی پوجا ...

Read More »

غزل ۔۔۔ شفقت عاصمی

یہ کیسا ستمگر اشارا ہوا ہے بہاروں میں گْل سے کنارا ہوا ہے اے جانِ جہاں خوف کا ہے یہ عالم ترے بن بھی رہنا گوارا ہوا ہے یہ ہر سو خموشی یہ تنہائی، وحشت سفر بے بسی کا ستارا ہوا ہے کہ نوچا ہے فطرت کو انساں نے بے حد اسی واسطے تو خسارا ہوا ہے کہ ہے آسماں،  ...

Read More »