Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2019 » January

Monthly Archives: January 2019

سریاب روڈ پر ایک خزاں کی شام ۔۔۔ رضوان فاخر

میری رگ رگ میں اتر آئی ہے انجیکٹڈ شام کانپتا جاتا ہوں سگریٹ کے کش لیتا ہوا اور سریاب کی ویران سڑک زرد خوابوں سے لپٹتے فٹ پاتھ بیتی شاموں سے بھری چائے کی خالی پیالی اور ہلکی سی شفق مائل ہوا چلتی ہوئی شاخچوں پر سے ٹپکتی ہیں لویں اور مدھم سے بہت ہی مدھم گنگناتے ہوئے چلتے ہیں ...

Read More »

دل جلتا ہے ۔۔۔ وھاب شوھاز

اک کرب ہے میرے سینے میں، سہتا ہی رہوں دل جلتا ہے کہہ دوں تو شکایت ہوتی ہے، اور لب سی لوں دل جلتا ہے ہر سو ہے تماشہ مقتل کا , بس خون ہی خون ہے دھرتی پر دل خون کے آنسو روتا ہے، میں پھر بھی جیوں دل جلتا ہے ماؤں نے جنے تھے خواب حسیں , جوویرانوں ...

Read More »

بہ کودکی کہ کاج کریمس را می آراید ۔۔۔ گلناز کوثر/احمد شہریار

چراغ ہاا تابانند و انعکاس نورشان در چشمان بَراق و کودکانہ ی تو می درخشد شادمانہ و عطربیز لابلای برگہای سبز توپ روشن نقرہ فام آہستہ می لغزد و اینک با لمس آن تو لحظہ ی رنگین شادمانی آسمانی را زیستہ ای اما کودک من ہیچ می دانی جایی از اینجا دور بسیار دور آن سوی دریاہای نیلگون درہمیں لحظہ ...

Read More »

جھمر ۔۔۔ مدثر بھارا

اوہاجھمر مریندے امدے ہائیں اوہو پھیر اڈیندے امدے ہائیں اساں جھومری مست قلند ہائیں اسا اپنڑے وسبے اندر ہائیں ول پیردے نال ہے پیر کھڑا دل تاڑی دے سنگ تاڑی ہے اوہوا گلاڈھول پیا وجدا ہے پئی اگلی جھمر کھڈ یندی اے توں جو سمجھیں توں جو جانڑ ئیں دل جھمر مریندے امدے ہائیں پورا شہر جگیندے امدے ہا ئیں ...

Read More »

غزل ۔۔۔ جمال بشیر

شپانی سینگا شہمے بلین ، سرگر و بیا دل ئے تھاری ئے ہلکا رسین ، سرگر و بیا خماریں ترانگاں گپتگ دل ئے ملاریں نپس شپانی روکیں دلاں انسرین ، سر گر و بیا کھیبی گوستہ دگہ وابے دیدگانی تھا دلا بہ زور ، چراگے ٹھین ، سرگر وبیا اے ہوٹگانی تہا ترمپے پشت نہ کپت دگہ نگاہاں نیست نوں ...

Read More »

دیوار گریہ  ۔۔۔ سعدیہ بشیر

لگے ہے دل یہ ، دیوار گریہ ہیں محو ماتم یہاں زمانے یہ زخم ہیں یا کہ تازیانے شجر دعاؤں سے لد چکے ہیں مگر ہیں شاخیں ثمر سے خالی گماں یقیں کا جو بھید پوچھے تو اشک کرتے ہیں ڑالہ باری جو درد ساکن تھے مدتوں سے لٹیں ہیں خواہش کے کارواں تو تڑپ کے کرتے ہیں آہ و ...

Read More »

نادر علی مزاری

اے مُرغاں مردُم بغیر پھراں کمال اش ایں پھیاذ غی آ اے ڈیہہ چھراں کمال اش ایں گُشائے تھاؤ ہر وماں بانگھ کھائیاں اے مُد گزرثا کھاں سال پُھشتا اے کونج تھراں کمال اش ایں ولا چھے دیثار کہ رندا تھئی آگنوح بیثا جہان لافا تی بعض شراں کمال اش ایں وثاراساقی اے رند گُشینہ اے لوک کھائے آں ورنتھ ...

Read More »

غزل  ۔۔۔ آسناتھ کنول

کیسی اُفتاد آپڑی دل پر اب ادھر کے ہیں نہ اُدھر کے ہیں اپنا کوئی پتہ نہیں ملتا دل کہاں کا ہے ہم کدھر کے ہیں کون سمجھائے گا ہمارا کچھ اُن سے روٹھے ہیں بس جدھر کے ہیں سلسلہ ربط کا کہاں تک ہے واقعے ضابطے کدھر کے ہیں دنیا یہ خامشی نہیں اچھی تم بتاؤ کہ ہم کدھر ...

Read More »

غزل  ۔۔۔ وھاب شوھاز

ایسے چلے, کہ بعد میں مڑ کر نہیں دیکھا دنیا نے ایسا کرب کا منظر نہیں دیکھا قطرے میں زندگی نے سجائی تھیں محفلیں صحرا میں پیاس جتنا سمندر نہیں دیکھا اْس شہرِ سنگبار سے لوٹے تو اس طرح پتھرتو ہاتھ میں تھا مگر سر نہیں دیکھا مجھ سے کیاپوچھتے ہو ہماری گلی کا حال مدت سے میں سفرمیں رہا ...

Read More »

امین کھوسہ، جھٹ پٹ۔۔۔۔رپورٹ: عابد میر

پہلا پتھر، پہلا سنگِ میل کتنا اہم ہوتا ہے،اس کا اندازہ شاید آپ تبھی کر سکیں جب کسی عمارت کے سنگِ بنیاد میں شامل رہے ہوں۔ ایک ایسا ہی سنگِ بنیاد 9اگست 2018ء کو اس وقت رکھا گیا جب کامریڈ نواز کھوسو نے کوئٹہ میں اپنی رہائش گاہ پہ شہید نذیرعباسی کی برسی پر انہیں یاد کرنے کا اہتمام کیا۔ ...

Read More »