Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2018 » November (page 10)

Monthly Archives: November 2018

افتخار عارف

30 October 2018 پیارے دوست شاہ محمدمری!۔ سلام و رحمت جس زمانے میں ابھی ہم جوانی کی سرحدوں میں تھے جان لینن کا گایا ہوا ایک مقبول انگریزی گاناجان کو آگیا تھا۔مکھڑے کا ایک مصرعہ تھا:۔ ” They say, I am a dreamer but I am not the only one” ۔ یہ گیت امن کا خواب دیکھنے والوں کے لیے ...

Read More »

آمنہ ابڑو

اب تو کوئی راہ نہیں ہے عشق کی ناگن کنڈل مارے من کے بیچ مجھے تکتی ہے میں ڈرتی تھی ڈس لے گی تو پیاس کے مارے مر جاؤں گی پاس پیا کب آئیں گے؟ اس آس کے مارے مر جاؤں گی چپ کی آگ میں جلتے جلتے دل کی بات نہ کہہ پاؤں گی۔ عشق کی ناگن پھن کو ...

Read More »

اللہ بشک بُزدار

تُرس دیغریں کوہئے سرا نشتہ وداریگاں کہ گِنداں رولہے ساھے ، دمے کشاں، نواں گامیگ باں (بالاں بدلی زُڑتگیں پندھانی پیچگ چون بی) مئیں ومنی بام ئے نیاما لرزغیں ڈئینڑیں شفے مں تُرسگاں ڈُنگے براثانی ھمیذا گوں کفی گُڈیث پاذاں ٹیلغاں کشیث بام ئے وزّتاں بے نور کنت شف تُرسگیں ماہئے برانزانی سفر کُٹیث ڈیہا روش بیث شمُش تئے شمُش ...

Read More »

افضال احمد سید 

میں مار دیا جاؤں گا افسوس کہ بہت سا وقت ان ہاتھوں کو ہموار بنانے میں ضائع ہوگیا جو ایک دن میرا گلا گھونٹ دیں گے ژاں ژینے کی بالکنی کے نیچے موسیقی فروش اور کباب بھوننے والے مجھے بتاتے ہیں مجھے ایک دن کھڑا کر کے مار دیا جائے گا میری قبر بے شناخت رہ جائے گی اسی عمارت ...

Read More »

اویس اسدی

سوچیں نظم ہیں آج بہارکا آخری دن ہے اور فضا میں کلیوں اور پھولوں کی سسکی گونج رہی ہے پتے جھڑ جانے سے پہلے شاخ کے سینے سے لپٹے ہیں اور اخباریں چیخ رہی ہیں غزہ پہ وہ بارود گراہے لگتا ہے اس بار سمندر جل جائے گا اور لاہور میں ماں اور اس کے دو بچوں کی لاشیں نہر ...

Read More »

افشین کمبرانڑیں

جاناں کے نام ( نوشین کمبرانڑیں کے لیے) وینگو کی پینٹننگ دیکھی،۔ جیسے گزرے موسم کے سب دھندلے منظر سالوں کی دہلیز سے ہوتے آنکھوں کے گلشن میں اترے..۔ مار چ کے دن تھے.. چلتن پر بھی رنگ کھلے تھے. بادل تھے، جو ہتم کی پہلی بارش کا سندیسہ لائے کیمپس کی سڑکوں پہ پہروں چلتے چلتے تمہیں اچانک باداموں ...

Read More »

افشین کمبرانڑیں

نظم پیاس ہے اور بے امانی ہے.. انہیں ہلکے سروں میں صدیوں سے جاوداں عشق کی کہانی ہے…. نہ جدائی نہ تشنگی کا گماں.. نہ کوئی حُزن ہے نہ ہجرت ہے… اس کہانی میں عمر بھر کے لئے میری، میرے وطن سے قربت ہے.. Mystery یہ آنکھیں یہ حسین و دلرُبا آنکھیں خمارِآگہی سے نیم وا آنکھیں۔ خرد کی کاہکشائیں ...

Read More »

اشرف یوسفی

یادوں کے ملبے میں دبی ہوئی ایک نظم یہ دالان تھا اس دالان میں پھولوں کی اک بیل ہوا کرتی تھی پہلے اس پر پھول کھلا کرتے تھے سوکھ گئی تھی اب وہ سنگ وخشت کے نیچے مٹی میں ہے جب اس کی رت یاد آتی ہے رو لیتا ہوں پھولوں جیسا ہو لیتا ہوں اس کھڑکی سے دھوپ آتی ...

Read More »

اللہ بشک بُزدار

زیندئے پری مں کہ بالی خیالانی آوار باں دیریں ڈیہانی جیذانی شونقاں شلاں گِنداں! زیندئے پری کندغیں، لُڈغیں دست پُلیں، گُلیں پاذ، ابریشمیں دیم ماہ گوانگیں دیذ ایماں بریں نوذ زانت ئے،قلم شائرئے عالم ئے نُور حرف ئے گُشئے ہر گُرے شنزغیں نارسائی غم ئے ٹونک پچار نے مہرئے واپار نے شاہی دربار نے عاجزیں انڑس مئیں برّاں کِشکاں تلاں ...

Read More »

اسامہ میر

Suicidal میں پناہ چاہتا ہوں تم سے اور تمہاری اس تیغ سے جو بے نیام ہونے سے پہلے ہی ایک سنسناہٹ پیدا کر سکتی ہے اور تم اسے استعمال میں لائے بغیر میری جان نکال سکتے ہو مار دینے کے لئے جگہ کا مخصوص ہونا ضروری ہے میں نے جنگلوں میں آدمی کی موت واقع ہوتے دیکھی اور شہری علاقوں ...

Read More »