Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2018 » August

Monthly Archives: August 2018

ٹکڑیاں (چھوٹی نظمیں) ۔۔۔۔۔ تمثیل حفصہ

۔1۔کشتی جل جاؤ۔۔۔۔۔ جاؤ۔۔۔۔۔۔ چاند کے پار۔۔۔۔ اک ندیا بہتے پانی کی۔۔۔۔ نیند کی لوری گاتی ہے۔۔۔۔ ۔2۔ایک لمحے کی رات رات کا ظلم سہا جنگ تاروں سے لڑی چاند چپکے سے ہنسا نیند حیران کھڑی خواب خاموش کھڑے سوچ کیسی ہے گھڑی ۔3۔منظر، خدشہ، احساس اور آس آدھی آنکھیں کھولی ہوں گی ایک ذرا سی آہٹ پر بھی سینے ...

Read More »

تخلیق ۔۔۔ انجیل صحیفہ

سکوت کو چیر کر اترتے قطرہ قطرہ حروف ذہن میں نمو پاتے ہیں تو میں نظموں کو جنم دیتی ہوں خیال کی بالیدگی کبھی ایک جملے کبھی ایک نظر اور کبھی ایک لمس کی منتظر رہتی ہے سرخ کو کاسنی ہونے کے لیے نیلا ہمیشہ درکار رہتا ہے تخلیق تمہارا حق ہے اور میری ذمہ داری!۔ نظر کی دوری سماعت ...

Read More »

غزل  ۔۔۔ ڈاکٹر منیر رئیسانی

سراپا خواب ہوں اور جاگتا ہوں یہ کس تعبیر میں الجھا ہوا ہوں نہیں پہچان یوں آسان میری شعاعِ مُرتعش کا آئینہ ہوں خموشی کو مری آسان مت لے کہ میں جب بولتا ہوں۔ بولتا ہوں ہوئے متروک سب الفاظ جن کے انہی بھاشاؤں میں لکھا گیا ہوں اذل سے ہے ابد ، بس ایک لمحہ فریبِ وقت کو جب ...

Read More »

آس کا کارواں ۔۔۔ آمنہ ابڑو

میں!۔ جانے کب سے دکھ بھری آندھیوں میں گھرے ہوئے دھوپ کے کارواں کے سنگ چلتی جاتی ہوں۔۔ مجھے منزلوں کا پتہ ہے نہ کوئی چاہت۔۔ مجھے تو بس تشنگیوں سے تار تار اس کارواں کے ساتھ چلتے ہی جانا ہے۔۔۔ کہ میرے لئے تو بس یہی بہت ہے کہ اپنے ہاتھ میں عصا تھامے سب سے آگے چلتے میرِ ...

Read More »

دانا ھاں چے گشتہ ۔۔۔ گوہر ملک

۔1۔ نیکین جنین تئی آخرتا ہم شرکنت۔ ۔2۔ جنینا تکلیف مہ دئے بلکن آنہی تکلیفاں دور بکن۔ ۔3۔ آنہی کہ سئے جنک اَنت، آجنتا منی ہمسا یگ انت۔ ۔4۔ جنینے آ تعلیم کُرت بزاں کہ یک خاندانے آ تعلیم کُرت۔ ۔5۔ جنین پہ مُصیبت و غم ئے کم کنگاپیدا کنگ بوتہ۔ ۔6۔ جنین چہ آدما جوڑ انت و آدم چہ ...

Read More »

نوشین کمبرانڑیں

مَیں رہی جس مِیں بے پناہ، میری جاں تو ہے وہ دشت_بے خدا، میری جاں جیسے شِریانوں سے گزرتا رہا خواب کا ایک قافِلہ، میری جاں دْور تک ٹْوٹتی نہیں نظریں کوئی جادْو ہے جا بجا، میری جاں سبزہِ جان میں دھڑکنے لگا کوہساروں کا راستہ، میری جاں میری آنکھوں میں پھول تھے کل شام تیری آنکھوں میں کون تھا، ...

Read More »

یوسف عزیز مگسی

’’ ہم یا س و حرمان کی رٹ لگاتے رہنے کے لیے پیدا نہیں ہوئے‘‘۔ جس طرح کثیف ہوا آمد ورفتِ نفس کو مشکل بنا دیتی ہے بعینہ اسی طرح میرا معاملہ ہے ۔ مگر تم مجھے جانتے ہو، میں مایوس نہیں ہوا، مایوس ہونا ختم ہو جانا ہے ۔ آرزوئیں آباد رہیں، خواہ کبھی بھی زلفِ یار تک رسائی ...

Read More »

واقعہ سانحہ بن چکا ہے ۔۔۔ رضوان فاخر

وہ چھوٹا سا معصوم جانور سڑک کے کنارے کھڑا اور میں ابو کی انگلی کو تھامے ہوئے آرہا تھا اسے دیکھتا جارہا تھا اٹھا کر اسے اپنے گھر لانا چاہتا تھا پر مِرا فیل کارڈ میرے ابو کے ہاتھوں میں تھا اور چہرے پہ غصے سے ابھرے ہوئے سب نشاں تھے وہ چھوٹا سا معصوم جانور سڑک کے کنارے کھڑا ...

Read More »

بدن کا ہدیہ ۔۔۔ کشور ناہید

جب میری روح پرواز کر جائیگی کتنا شاداب ہوگا وہ بدن جسمیں میرا دماغ لگایا جائیگا اور وہ دل جب کسی جسم میں دھڑکے گا تو شہنائیاں گونجیں گی میں تو چاہونگی میری زبان سچ بولنے والے منہ میں لگادی جائے جس دن کسی چشم کو رکی مایوسیاں، میری آنکھوں سے یوں شعاع ریز ہوں کہ ہر ایک رنگ کی ...

Read More »

کشور ناہید

بھولے ہوئے زخموں کو آئینہ دکھاتا ہے اے کوچہ رسوائی کیوں مجھ کو بلاتا ہے جب آنکھ ذرا جھپکے ، باتوں میں لگا لینا یہ شوقِ تماشا بھی کیا حشر اٹھاتا ہے کیوں آنکھ پہنتی ہے ملبوسِ عزاداری کیوں خوابِ خزاں خورہ وحشت کو بڑھاتا ہے معلوم نہیں کچھ بھی ، معلوم سبھی کچھ ہے طاؤسِ بیابانی کیا مجھ سے ...

Read More »